پی ٹی ایم کی ژوب میں خواتین کو گھروں سے نکالنے کی کوشش پی ٹی ایم نے ژوب میں پشتون خواتین کو گھروں سے نکالنے کے لیے “واک” کے نام سے تحریک شروع کی ہے۔

اس تحریک کو پی ٹی ایم ملی مشرے ثناء اعجاز اور وڑانگہ لونی لیڈ کر رہے ہیں۔ تحریک کے لیے مرکز بھی بنایا ہے جس کو خواتین کی لائبریری کا نام دیا ہے۔ لائبریری میں موجود تقریبا تمام کتابیں خواتین کو گھروں سے نکلنے، پردہ نہ کرنے، میرا جسم میری مرضی اور لوئے افغانستان کی ترغیب پر مبنی ہیں۔

پی ٹی ایم کی سرگرمیوں پر مقامی پشتونوں میں بےچینی کی لہر دوڑ گئی۔ اتنظامیہ کو خبر کی گئی۔ جس کے بعد انتظامیہ نے ثناء اعجاز کو صوبہ بدر کر دیا۔

خیال رہے کہ ثناء اعجاز پر حکومت بلوچستان نے صوبے میں داخلے پر پابندی عائد کی ہے۔ اس سلسلے میں ایس ایس پی ژوب کا کردار قابل تعریف رہا۔

پی ٹی ایم نے تقریب میں شرکت کرنے والی پشتون خواتین کی تصاویر سوشل میڈیا پر وائرل کر دی ہیں۔

ثناء اعجاز نے پشاور میں “میرا جسم میری مرضی مارچ” کا اہتمام کیا تھا جس میں سینکڑوں خواتین کے ساتھ ملکر بےہودہ نعرے لگائے۔ اس کارنامے پر منظور پسکین نے تقریر کرتے ہوئے کہا کہ “ثناء اعجاز ثنا (تعریف) کے لائق ہے۔” “ثنا” لفظ عام طور اللہ کی حمد و ثنا کے لیے استعمال ہوتا ہے۔ جانے منظور پسکین نے اس کو طوائفوں کے لیے کیوں استعمال کیا

تحریر شاہد خان

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here