پرویز مشرف پر آرٹیکل 6 کا مقدمہ بنانے پر نوازشریف اور چوہدری نثار کیخلاف درخواست دائر

0
43

سپریم کورٹ میں سابق صدر پرویز مشرف پر آرٹیکل 6 کا مقدمہ بنانے پر سابق وزیراعظم نوازشریف اور سابق وزیر داخلہ چوہدری نثار کیخلاف دائر کردی گئی ، جس میں کہا گیا دونوں کیخلاف سخت کارروائی کاحکم دیا جائے۔

سابق صدر پرویز مشرف پر آرٹیکل 6 کا مقدمہ بنانے کیخلاف سپریم کورٹ میں درخواست دائر کردی گئی، درخواست میں نواز شریف، چوہدری نثار و دیگر کو فریق بنایا گیا ہے۔

درخواست میں مؤقف اختیار کیا کہ لاہور ہائی کورٹ نےخصوصی عدالت کی تقریری کوغیر قانونی قراردیا ہے،ہائی کورٹ فیصلے سے ثابت ہوا پرویز مشرف کیخلاف کارروائی بدنیتی پر تھی۔

درخواست میں کہا گیا سابق وزیراعظم نوازشریف اور سابق وزیر داخلہ چوہدری نثار کے خلاف سخت کارروائی کی جائے اور سابق سیکریٹری شاہد خان کیخلاف بھی غیر آئینی اقدامات پر فیصلہ دیا جائے۔

درخواست میں کہا گیا نواز شریف کو واپس وطن لاکر سزا مکمل کرانے کا حکم دیا جائے اور چوہدری نثار ،شاہد خان کے نام ای سی ایل میں شامل کئے جائیں۔

یاد رہے لاہور ہائیکورٹ نے پرویز مشرف کی درخواست منظور کرتے ہوئے خصوصی عدالت کا قیام اورفیصلہ کالعدم قرار دیا تھا، عدالت نے فیصلے میں کہا گیا تھا کہ آرٹیکل 6 کےتحت ترمیم کا اطلاق ماضی سے نہیں کیا جاسکتا، ملزم کی غیر موجودگی میں فیصلہ نہیں سنایا جاسکتا، ملزم کی غیرموجودگی میں ٹرائل بھی کرنا غیر آئینی ہے۔

مزید پڑھیں : پرویز مشرف کو سزائے موت کا حکم دینے والی خصوصی عدالت کی تشکیل غیرآئینی قرار

واضح رہے خصوصی عدالت نے آئین شکنی کیس میں سابق صدر کو سزائےموت سنائی تھی، جس کے بعد پرویزمشرف کی جانب سے خصوصی عدالت کا فیصلہ چیلنج کیا تھا، درخواست میں کہا گیا تھا کہ آرٹیکل سکس کے تحت کارروائی کے لیے وفاقی کابینہ کی منظوری ضروری ہے،سابق وزیراعظم نواز شریف نے ایگزیکٹو اختیارات استعمال کرکے درخواست دائر کی، اس معاملے میں آئینی اور قانونی تقاضے پورے نہیں کیے گئے۔

خیال رہے کہ 17 دسمبر کو خصوصی عدالت نے آئین شکنی کیس میں محفوظ شدہ فیصلہ سناتے ہوئے سابق صدر و سابق آرمی چیف پرویز مشرف کو سزائے موت دینے کا حکم دیا تھا، عدالت نے اپنے مختصر فیصلے میں کہا تھا کہ سابق صدر پرویز مشرف پر آئین کے آرٹیکل 6 کو توڑنے کا جرم ثابت ہوا ہے۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here