لندن میں نوازشریف کی پاکستان کے خلاف ہرزہ سرائی کرنے والے سے ملاقات

معاون خصوصی ڈاکٹر شہباز گل کا کہنا ہے کہ لندن میں نوازشریف نے پاکستان کے خلاف ہرزہ سرائی کرنے والے سے ملاقات کی، ذرائع سے معلوم ہوا ہے ملاقات میں مسٹرمحب مودی کا خاص پیغام لائے۔

لندن میں نوازشریف اور افغان سیکیورٹی ایڈوائزر کی ملاقات ہوئی، نوازشریف نے پاکستان کے خلاف ہرزہ سرائی کرنے والے سے ملاقات کی، ملاقات سے کیا واضح نہیں ہوتا کہ نوازشریف کا ایجنڈا کیا ہے ؟؟؟ معاون خصوصی ڈاکٹر شہباز گل

شہبازگل کا مزید کہنا تھا کہ ذرائع سے معلوم ہوا ہے ملاقات میں مسٹرمحب مودی کاخاص پیغام لائے، کشمیر کے الیکشن کے نتائج کو متنازعہ بنایا جائے گا، آزاد کشمیر اور مقبوضہ کشمیر کے الیکشنز کو ایک سا دکھانے کی کوشش ہوگی، ملاقات اسی منافقانہ ایجنڈے پر ہوئی۔

افغان نیشنل سیکیورٹی ایڈوائزر حمداللہ محب نے کچھ عرصہ قبل پاکستان پر سنگین الزامات عائد کرتے ہوئے سخت الفاظ کہے تھے اور پاکستان کو چکلا (قحبہ خانہ)کہا تھا جس پر پاکستان کی طرف سے شدید احتجاج سامنے آیا۔ حمداللہ محب کی گالی کے بعد پاکستان نے آئندہ حمداللہ محب سے کسی قسم کا رابطہ نہ رکھنے کا فیصلہ کیا۔

شاہ محمود قریشی نے حمداللہ محب کے بیان پر ردِعمل دیتے ہوئے کہا تھا کہ ’جب سے آپ نے پاکستان کا موازنہ قحبہ خانے سے کیا ہے میرا خون کھول رہا ہے۔ آپ کو شرم آنی چاہیے اور آپ کو اپنا طرز عمل ٹھیک کرنا ہو گا۔‘

شاہ محمود قریشی نے مزید کہا تھاکہ اب کوئی بھی پاکستانی نہ تو افغان مشیر برائے قومی سلامتی سے بات کرے گا اور نہ ہی ہاتھ ملائے گا۔

نوازشریف کی حمداللہ محب سے ملاقات پر سوشل میڈیا پر بھی سخت ردعمل دیکھنے کو ملا، سوشل میڈیا صارفین کا کہنا تھا کہ جس پاکستان نے آپکو سرآنکھوں پر بٹھایا، آپکو وزیراعظم بنایا، آپ اسی ملک کو گالی دینے والے سے ملاقاتیں کررہے ہیں، کچھ سوشل میڈیا صارفین نے نوازشریف کو “الطاف حسین ثانی” بھی قراردیا۔

سوشل میڈیا صارفین کا کہنا تھا کہ سوال یہ پیدا ہوتا ہے کہ جس شخص نے پاکستان کو گالی دی، پاکستان نے اس سے کسی قسم کا تعلق نہ رکھنے اور رابطہ نہ کرنے کا اعلان کیا، کیا نوازشریف کو نہیں معلوم کہ اس شخص نے پاکستان سے متعلق کیا غلط زبان استعمال کی ہے؟

وفاقی وزیر اطلاعات فواد چوہدری نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر لندن میں نوازشریف اور افغان سیکیورٹی ایڈوائزر کی ملاقات پر ردعمل کا اظہار کرتے ہوئے کہا۔

نواز شریف کوباہربھیجناخطرناک تھا ، نوازشریف جیسےلوگ عالمی سازشوں میں مددگار بن جاتے ہیں، نواز شریف کی را کے حلیف حمداللہ سےملاقات ایسی کاروائی کی مثال ہے، مودی، محب یا امراللہ صالح ہر پاکستان دشمن نواز شریف کا قریبی دوست ہے

وطن سےفرارہوکروطن کے مخالفین سے ملاقاتیں کررہے ہیں، دشمنوں سےدوستیاں اورتحائف کےتبادلےکیےجارہے ہیں۔ فیصل جاوید خان

فیصل جاوید کا کہنا تھا کہ کشمیرکاسودا کرنیوالوں کوکل کشمیری عوام مستردکرےگی، جیت کشمیرکےسفیر عمران خان کی ہوگی۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here