انڈیا کی سائبر دہشتگردی

انڈیا کی سائبر دہشتگردی جس وقت نیوزی لینڈ کرکٹ ٹیم بھاگی تو پاکستان نے نیوزی لینڈ سے انفارمیشن شیئر کرنے کا کہا تاکہ اگر واقعی کوئی خطرہ ہو تو اس سے نمٹا جائے۔ لیکن نیوزی لینڈ نے کسی قسم کی معلومات دینے سے انکار کر دیا۔ تاہم آئی ایس آئی لگی رہی اور سراغ لگانے میں کامیاب ہوگئی کہ انڈیا نے شرارت کی ہے۔

۔ 19 اگست کو انڈیا سے احسان اللہ احسان کے نام سے بنائے گئے ایک فیس بک اکاؤنٹ کی مدد سے نیوزی لینڈ کرکٹ ٹیم کو خبردار کیا گیا کہ ان کی ٹیم پر ‘داعش’ حملہ کرے گی۔

۔ 21 اگست کو انڈین اخبار میں ابی نندن مشرا نے آرٹیکل لکھا کہ نیوزی لینڈ کرکٹ ٹیم کو پاکستان میں خطرہ ہے اور ان کو نہیں جانا چاہئے۔

۔ 24 اگست کو انڈیا سے ہی نیوزی لینڈ کرکٹ ٹیم کے کپتان کی بیوی کو ایک ای میل کی گئی جس میں ان کو بتایا گیا کہ پاکستان میں ان کے شوہر کو قتل کر دیا جائیگا۔

ساتھ ہی انڈین اخبارات نے بھی آرٹیکلز چھاپے کہ پاکستان میں نیوزلینڈ کرکٹ ٹیم کو خطرہ ہے۔ جس کے بعد نیوزی لینڈ کرکٹ ٹیم دم دبا کر بھاگ گئی اور اس کے بعد برطانیہ نے بھی اپنا دورہ پاکستان منسوخ کرنے کا اعلان کر دیا۔ 18 ستمبر کو انٹر پول نے ایک اور ای میل کا بتایا جو نیوزی لینڈ پولیس کو ریسیو ہوئی تھی۔ وہ بھی انڈیا سے کی گئی تھی۔

دو ممالک نے اپنے ٹووور منسوخ کر دئیے محض ایک فیس بک پوسٹ دو، دو فیک ای امیل اور انڈین اخبار میں چھپنے والے آرٹیکل کی بنیاد پر

پاکستان میں عمر چیمہ نامی ن لیگی صحافی نے لکھا کہ “برٹش ھائی کمیشن نے ایک کال پکڑی ہے جس میں نیوزی لینڈ کرکٹ ٹیم پر خود کش حملے کی بات کی جارہی تھی۔” وہ ٹویٹ اس نے ڈیلیٹ کردی لیکن جو افواہ پھیلانی تھی پھیلا دی۔

(یہ وہ گندے انڈے ہیں جو جھوٹی خبریں دینے پر جرمانے کے خلاف احتجاج کر رہےہیں)

برطانوی ہائی کمیشن لاتعلقی ظاہر کی۔ ساتھ ہی یہ بھی کہا کہ ہم نے اپنے شہریوں کو پاکستان کے حوالے سے کسی بھی قسم کا تھریٹ الرٹ جاری نہیں کیا اور یہ برطانوی کرکٹ بورڈ کا اپنا فیصلہ ہے۔

اس کے بعد پاکستان کا کیس بہت مضبوط ہوچکا ہے۔ نیوزی لینڈ نے انفارمیشن تو نہیں دی تھی لیکن اب پاکستان عالمی عدالت یا آئی سی سی میں معاملہ لے کر جائیگا اور نیوزی لینڈ کرکٹ بورڈ اور برطانوی کرکٹ بورڈ سے ثبوت مانگے گا کہ کس بنیاد پر پاکستان کا دورہ ملتوی کیا تھا ؟؟؟

جس نے پوری دنیا میں پاکستان کی جگ ہنسائی کی اور اربوں روپے کا نقصان دیا۔

اگر وہ ثبوت پیش نہ کر سکے جو کہ ظاہر ہے ان کے پاس نہیں ہیں تو پاکستان اپنے جمع کردہ ٹھوس ثبوت دنیا کے سامنے رکھے گا اور دونوں ممالک سے بھاری ہرجانہ طلب کرے گا یا وہ اپنے دورے بحال کرینگے۔

یاد رہے کہ نیوزی لینڈ کرکٹ ٹیم تین چار دن پریکٹس کے لیے بھی گئی اور کوئی خطرہ نہیں تھا۔ انڈیا کا منہ پھر کالا ہوگیا ہے اور پاکستان کو کرکٹ دورہ ملتوی کرنے والے برطانیہ اور نیوزی لینڈ کو سبق سکھانے کا موقع ملا ہے۔ تینکس ٹو پاکستان انٹلیجنس ایجنسی ۔۔۔

ساتھ ہی حکومت یا پی سی بی ‘عمر چیمہ’ کو گرفتار کرائیں اور اس سے خودکش حملے والی خبر کا سورس طلب کریں۔ اگر پیش نہ کر سکے تو دہشتگردی اور جھوٹی خبر پھیلانے کے مقدمات درج کیے جائیں اور ٹویٹر انتظامیہ سے رابطہ کر کے اس کا ٹویٹر اکاؤنٹس سسپنڈ کرایا جائے۔

تحریر شاہد خان

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here