حکومت کا مولا نافضل الرحمان کی تقاریر پر قانونی چارہ جوئی کا فیصلہ

0
158

حکومت نے جمعیت علماء اسلام (ف) کے سربراہ مولانا فضل الرحمان کی آزادی مارچ میں کی گئی تقاریر پر قانونی چارہ جوئی کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق وزیراعظم عمران خان کی زیرصدارت پی ٹی آئی کی کورکمیٹی کا اہم اجلاس ہوا جس میں آزادی مارچ کے بعد پیدا ہونے والی صورتحال پر تبادلہ خیال کیا گیا۔

کورکمیٹی نے مولانا فضل الرحمان کی اداروں پرتنقید کی شدید مذمت کرتے ہوئے ان کے خلاف قانونی چارہ جوئی کرنے کا فیصلہ کیا۔

یہ بھی پڑھیں: دھرنا سیاسی سرگرمی ہے، فوج کا تعلق سیاست سے نہیں ہوتا، ڈی جی آئی ایس پی آر

اس موقع پر وزیراعظم عمران خان کا کہنا تھا کہ مولانا فضل الرحمان نےمارچ کےدوران مذہب کارڈ کو استعمال کیا، فضل الرحمان نےدھرنےسے کشمیر کاز کو شدید نقصان پہنچایا۔

اجلاس میں وزیراعظم عمران خان نےمیڈیا کےاموردیکھنے کیلئے ایک کمیٹی بھی تشکیل دی جس میں فردوس عاشق اعوان، جہانگیرترین، اسدعمر، اور فوادچوہدری شامل ہیں۔

کمیٹی عوامی فلاح کےاقدامات سےمتعلق منصوبہ بندی اور بیانیہ طے کرے گی، کمیٹی صوبائی حکومتوں کے ساتھ مل کرعوام کی فلاح کےلئے کام کرے گی۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here