وزیراعلیٰ خیبرپختونخوا محمود خان نے ضلع کرک میں مندر دوبارہ تعمیر کرانے کا اعلان کردیا۔

اپنے تازہ بیان میں صوبائی وزیراعلیٰ محمود خان نے کہا کہ حکومت مندر کی دوبارہ تعمیر کو جلد یقینی بنائے گی، مندر کی دوبارہ تعمیر کے متعلقہ حکام کو احکامات جاری کیے گئے۔

ان کا کہنا ہے کہ اقلیتوں کی مقدس مقامات کا تحفظ ہر صورت یقینی بنایا جائے گا۔

وزیراعلیٰ کے پی کا کہنا تھا کہ واقعے میں ملوث متعدد افراد کو گرفتار کر لیا گیا ہے، ملوث افراد کے خلاف سخت کارروائی عمل میں لائی جائے گی، کسی کو بھی قانون اپنے ہاتھ میں لینے کی اجازت نہیں دی جائے گی۔

خیال رہے کہ گزشتہ روز خیبر پختونخوا کے ضلع کرک میں مشتعل ہجوم نے ہندو بزرگ کی سمادھی مزار میں توڑ پھوڑ کی اور اسے نذر آتش کردیا تھا، واقعہ کرک کے دور دراز علاقے ٹیری ٹاؤن میں پیش آیا تھا۔

بعد ازاں چیف جسٹس گلزار احمد نے کرک میں مندر کو آگ لگانے کے واقعے کا ازخود نوٹس لیتے ہوئے 4 جنوری کو واقعے کی رپورٹ طلب کی۔ چیف جسٹس نے چیف سیکریٹری، آئی جی کے پی اور ایک رکنی اقلیتی حقوق کمیشن کو متاثرہ مندر کے دورے کا حکم بھی دیا۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here