1989 میں بے نظیر بھٹو نے انڈیا کو پاکستان پر حملے کی دعوت دی اور خالصتان تحریک ختم کرنے کے لیے انڈیا کو سکھ مزاحمت کاروں کے بارے میں اطلاعات دی تھیں

0
276

1989 میں بے نظیر بھٹو نے انڈیا کو پاکستان پر حملے کی دعوت دی اور خالصتان تحریک ختم کرنے کے لیے انڈیا کو سکھ مزاحمت کاروں کے بارے میں اطلاعات دی تھیں ۔ یہ دعوت نامہ چودھری شجاعت اور پرویز الہی پوری دنیا کو دکھاتے رہے ۔ لیکن بعد میں اسی پیپلز پارٹی سے اتحاد بھی کر لیا ۔

بے نظیر نے مرنے سے کچھ عرصہ پہلے اعلان کیا تھا کہ وہ امریکہ کو پاکستان کے ایٹمی پروگرام اور ڈاکٹر عبدالقدیر تک رسائی دے دینگی اور پاکستان میں کہیں بھی حملہ کرنے کی اجازت دے دینگی ۔

نواز شریف نے کشمیری مجاہدین کے بارے میں انڈیا کو اطلاعات فراہم کیں ۔

آصف زرداری نے امریکہ کو پاکستان پر حملہ کرنے کے لیے خط لکھا یہ “میمو گیٹ” کے نام سے مشہور ہوا ۔

اور اب مبشر لقمان کے مطابق نواز شریف کے ایک اپنے بندے نے انکشاف کیا ہے کہ انڈیا کی جانب سے بارڈر پر جاری گولہ باری میاں صاحب ہی کی درخواست پر کی جا رہی ہے ۔ تاکہ ” آزادی مارچ اور انقلاب مارچ” وغیرہ کے دوران پاک فوج کو مصروف رکھا جا سکے اور وہ حکومت کا تختہ نہ الٹ سکیں ۔

اسی طرح الطاف حسین انڈیا میں تقریر کرتے ہوئے پاکستان بننے کو سب سے بڑی غلطی قرار دیتے ہیں اور لندن میں بیٹھ کر پاکستان کو توڑ دینے کی بات کرتاہے ۔

فضل الرحمان کشمیر کے معاملے میں انڈیا کے “کچھ ” علمائے دیوبند کے اس موقف کو کہ ” کشمیر انڈیا کا ہے ” درست سمجھتے ہیں اورلمبے عرصے سے کشمیر کمیٹی کے چیرمین بھی ہیں نتیجے میں ہم کشمیر کو سفارتی سطح پر تقریباً کھو چکے ہیں ۔

عوامی نیشنل پارٹی کھلے عام پختونستان بنانے کی بات کرتی ہے ۔ خود کو آج بھی انڈین نیشنل کانگریس سے وابستہ کہتی ہے اور پاکستان میں انڈیا کے کہنے پر ڈیم نہیں بنانے دے رہی ۔

لیکن ان میں سے کوئی ایک بھی غداری کے زمرے میں نہیں آتی 🙁

آہ پاکستان کے یہ جمہوری لیڈر 🙁

اقتدار اور صرف اقتدار ہی ان کا مطلوب و مقصود ہے اور اسکے لیے یہ کچھ بھی کر سکتے ہیں ۔ یہ دن رات بولتے رہتے ہیں اور عوام کو مسلسل باور کراتے ہیں کہ صرف وہی انکے اصل خیر خواہ ہیں ۔ لیکن انکی یہ خیرخواہی اور حب الوطنی ہمیشہ صرف انکے بیانات تک ہی محدود رہتی ہے ۔ یہ کبھی انکے اعمال میں نظر نہیں آئی ۔

تحریر شاہدخان

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here