۔ 1965 میں جنگ سے صرف ایک یا دو دن پہلے انڈیا کی لوک سبھا کے بہت سے ممبران میں دعوت نامے تقسیم کیے گئے تھے جن میں لاہور میں منعقد ہونے والی جشن فتح میں شرکت کی دعوت دی گئی تھی

0
111
Sharing Services
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

۔ 1965 میں جنگ سے صرف ایک یا دو دن پہلے انڈیا کی لوک سبھا کے بہت سے ممبران میں دعوت نامے تقسیم کیے گئے تھے جن میں لاہور میں منعقد ہونے والی جشن فتح میں شرکت کی دعوت دی گئی تھی ۔

ساتھ ہی لاہور پر حملہ آور ہونے والی فوج کو ایک زائد استری شدہ وردی دی گئ تھی تاکہ لاہور فتح ہونے کے دوسرے دن جب بی بی سی اور دنیا بھر کا میڈیا آئے تو وہ دیکھ سکے کہ انڈین آرمی لاہور فتح کرنے کے بعد بھی کتنی فریش ہے ۔

جنگ کے دوسرے دن جب انڈین لوک سبھا میں جنگ کی تازہ ترین صورت حال پر انڈین آرمی کے ایک افسر نے برفینگ دیتےہوئے بتایا کہ ۔۔۔۔۔۔

لاہور پر حملے کے بعد وہاں موجود پاکستانی رینجرز نے ہی انڈین آرمی کے فل سکیل حملے کو تین چار گھنٹوں کے لیے روک لیا تھا جب تک کہ پاکستان کی باقاعدہ فوج پہنچ گئی اور اب پاکستانی فوج انڈیا کے کئی علاقوں میں پیش قدمی کر چکی ہے ۔

تو انڈین لوک سبھا میں اتنی خاموشی چھا گئی کہ سوئی گرتی تو اسکی آواز بھی سنائی دیتی ۔۔۔۔

کاش کاش ۔۔۔ وہ لمحہ اور اس وقت انڈین اراکین پارلمنٹ کے تاثرات ہم دیکھ سکتے !!

تحریر شاہد خان


Sharing Services
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here