یہ آپ ٹی ٹی پی ، القاعدہ ، افغان طالبان ، پاک فوج غرض کسی کے بارے میں بھی کر سکتے ہیں

0
176
Sharing Services
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

استخارہ اللہ نے محض ہمارے رشتے ناتے طے کرنے کے لیے نہیں بھیجا ہے بلکہ انتہائی اہم امور سرانجام دینے سے پہلے اس طریقے سے اللہ سے مشورہ کر لینا چاہئے ۔۔۔!!

اس وقت لوگ ایک دوسرے کو فساد پر آمادہ کرنا چاہتے ہیں ۔ یاد رکھیے احادیث کی رو سے اگر آپ کا خروج درست نہ ہوا تو آپ جہالت کی موت مریں گے ۔ 

ہر وہ شخص جو پاکستان میں جاری اس جنگ میں کسی بھی فریق کا ساتھ دینا چاہتا ہو یا کسی بھی سرگرمی کا حصہ بننا چاہتا ہو تو اس کو لازمً اللہ سے مشورہ کر لینا چاہئے کہ ۔۔۔۔۔۔

” یا اللہ کیا میں فلاں جماعت کا ساتھ دوں یا فلاں کے خلاف جنگ کروں ؟ ”

یہ حضور (ص) کا سکھایا ہوا طریقہ ہے جس پر کوئی اعتراض نہیں کر سکتا اور اس میں پھر جو بھی مشورہ ملے اس پر ڈٹ جائیں ۔

یہ آپ ٹی ٹی پی ، القاعدہ ، افغان طالبان ، پاک فوج غرض کسی کے بارے میں بھی کر سکتے ہیں !

استخارے کا نتیجہ آپ خود ہی دیکھتے ہیں اسلئے آپ ہر طرح سے مطمئن رہیں گے !!

جو لوگ اس طریقے پر یقین نہ رکھتے ہوں تو میں انہیں ذاتی طور پر یہ مشورہ دے سکتا ہوں کہ وہ تبلیغی جماعت کے کسی بڑے عالم سے مشورہ کر لیں کہ وہ میری رائے میں سب سے بہترین لوگ ہیں !!!

یاد رکھیے اپنا یا کسی کا خون بہانا بہت بڑا فیصلہ ہے جس پر آپ کے جنتی اور جہنمی ہونے کا فیصلہ ہو سکتا ہے اس لیے پوری احتیاط کیجیے !

درخواست گزار شاہد خان


Sharing Services
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here