ہندوؤں نے کشمیر پر ناجائز قبضہ جما رکھا ہے جبکہ یہودیوں نے فلسطین پر ناجائز قبضہ جما رکھا ہے ۔

0
506

ہندوؤں اور یہودیوں میں حیرت انگیز مماثلت ہے ۔۔۔۔۔!!

سود خور یہودی اور سود خور بنیا ضرب المثل ہیں ۔

یہودی اور ہندو دونوں ہی اپنی مکاری اور سازش کے لیے بھی مشہور ہیں ۔

ہندوؤں میں برہمن خود کو اعلی سمجھتے ہیں اور باقی انسانوں بشمول ہندوؤں تک کو رذیل حتی کہ جانوروں سے بھی بدتر سمجتھے ہیں اور انکو چھونا تک حرام سمجتھے ہیں ۔ یہی حال یہودیوں کا ہے اور جو خود کو اعلی اور برگزیدہ سمجھتے ہیں اور باقی انسانوں کو ” گوئم ” یعنی انسان اور جانور کی درمیانی مخلوق قرار دیتے ہین ۔

یہاں کچھ لوگوں کا یہ دعوی بھی سچ ہی لگتا ہے کہ ہندوؤں میں برہمن دراصل مصر سے آئے ہوئے یہودی ہیں ۔ وہ اس کے لیے مختلف دلائل دیتے ہیں ۔ آپ نوٹ کیجیے کہ آج تک برہمنوں کو “مصر جی” بھی کہا جاتا ہے ۔

یہودی مسجد اقصی کو شہید کر کے ہیکل سلیمانی کی تعمیر کرنا چاہتے ہیں جبکہ ہندو بابری مسجد کو شہید کر کے رام مندر بنانا چاہتے ہیں ۔

ہندوؤں نے کشمیر پر ناجائز قبضہ جما رکھا ہے جبکہ یہودیوں نے فلسطین پر ناجائز قبضہ جما رکھا ہے ۔

پاکستان کے معاملے میں انکی یہ مماثلت اور بھی حیرت انگیز ہو جاتی ہے ۔

یہودی گریٹر اسرائیل بنانا چاہتے ہیں اور پاکستان کو سب سے بڑی رکاؤٹ خیال کر تے ہیں ۔ جبکہ ہندو اکھنڈ بھارت بنانا چاہتے ہیں اور پاکستان کو ہی اس میں سب سے بڑی رکاؤٹ خیال کرتے ہیں ۔

کچھ لوگ پاکستان کو مدینہ کے بعد دوسری اسلامی نظریاتی ریاست قرار دیتے ہیں اگر یہ درست مان لیا جائے تب معاملہ مزید دلچسپ ہو جاتا ہے ۔

مدینے کو ایک طرف یہودیوں سے خطرہ تھا اور دوسری طرف مکہ کے مشرکوں سے ۔

پاکستان کو بھی ایک طرف یہودیوں سے خطرہ ہے یعنی اسرائیل کی ریاست سے اور دوسری طرف ہندوؤں سے جو کہ مشرکین ہیں ۔

مدینے کے خلاف بھی مشرکین اور یہودیوں کا اتحاد ہوا تھا جبکہ پاکستان کے خلاف بھی یہودیوں اور ہندوؤں (مشرکین ) کا اتحاد ہو چکا ہے ۔

اب اگر ہم اس سارے معاملے میں غزوہ ہند کی مشہوری حدیث کو شامل کرتے ہیں تو پاکستان کو بیک وقت ہندو (مشرکین ) اور یہودیوں سے جنگ درپیش ہوگی ۔ اور جس طرح مدینے کی ریاست نے ان دونوں طاقتوں پر غلبہ پا لینے کے بعد آدھی دنیا پر غلبہ پا لیا تھا اسی طرح جب اللہ پاکستان کے ہاتھوں انڈیا اور اسرائیل کا خاتمہ فرمائے گا تو اسلام کو دنیا پر غالب ہونے سے کوئی طاقت نہیں روک سکے گی ۔

اور یاد رکھیے غزوہ ہند والی حدیث پر پاکستان کے علاوہ کوئی اور اسلامی ملک پورا نہیں اترتا کیونکہ پاکستان دنیا کے 56 اسلامی ممالک میں سے واحد ملک ہے جس کی بیک وقت انڈیا اور اسرائیل دونوں سے دشمنی ہے ۔ باقی اسلامی ملکوں کا معاملہ ایسا نہیں ہے۔

پاکستان کو ہی اللہ نے بہادر پاک فوج ، نہایت اعلی نیوکلیر میزائل پروگرام اور جذبہ جہاد سے سرشار مجاہدین کی بہت بڑی قوت سے لیس کر رکھا ہے ۔۔۔۔

مجھے تو اس ساری صورت حال میں بہت سی باتیں عجیب اور دلچسپ لگتی ہیں آپکا کیا خیال ہے ؟؟؟ کیا اللہ ہم سے کوئی خاص کام لینے والا ہے ؟؟؟

تحریر شاہد خان

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here