ہمارے جو لیڈر لبرل ہونے کے دعوے کرتے ہیں انہیں ضرور یہ وضاحت کرنی چاہئے کہ ۔۔۔ ” لبرل ازم سے کیا مراد ہے

0
649

لبرم ازم سے مراد اگر وسیع القلبی ، فکری کشادگی اور مساوات ہے تو اسلام سے زیادہ لبرل کوئی مذہب دنیا میں موجود نہیں ۔۔۔۔۔ جس نے پہلی بار عورتوں اور غلاموں کے حقوق مقرر کیے اور یہ اعلان کیا کہ کالے کو گورے پر اور گورے کو کالے پر کوئی فوقیت نہیں سوائے تقوی کے !!!

لیکن اگر لبرل ازم سے مراد آزادیوں کو ایسا تصور ہے جو فحاشی و بے حیائی پر مبنی ہو یا فطرت کے خلاف عورت کو مرد کے مقام پر کھڑا کرنا اور مرد کو عورت کے مقام پر کھڑا کرنا ہو یا ایسے نظریات و افکار کو قبول کرنا جن کو انسانیت صدیوں سے معیوب سمجھتی رہی ہے اور یا حق کی بات اکثریت کی رائے پر ترک کر دینا ہو تو نہ اسکی اسلام میں گنجائش ہے اور نہ انسانی فطرت میں ۔۔۔۔۔ یہ ہمیشہ فساد پیدا کرتا رہے گا ۔۔۔۔۔۔۔۔۔!!!

ہمارے جو لیڈر لبرل ہونے کے دعوے کرتے ہیں انہیں ضرور یہ وضاحت کرنی چاہئے کہ ۔۔۔ ” لبرل ازم سے کیا مراد ہے “۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔!!!

تحریر شاہد خان

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here