گلالئی اسماعیل کی آگاہ لڑکیاں

0
547
Sharing Services
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

گلالئی اسماعیل کی آگاہ لڑکیاں.
پی ٹی ایم کی حمایت کر کے گلالئی اسماعیل نے منظور پشتین کے پیروکاروں میں اپنی پہچان اور مقبولیت بنائی. اور پھر منظور پشتین جسے پی ٹی ایم والے نر پشتین کہتے ہیں ایک عورت کے آگے جھکنے پہ مجبور ہو گیا. پہلے پہل گلالئی اسماعیل برطانیہ میں ہم جنس پرستی کے فروغ کےلیے کام کرتی تھی. کوئی عام پاکستانی اسے جانتا بھی نہیں تھا جب یہ برطانیہ میں تقریریں کرتی تھی کہ مرد سے مرد اور عورت سے عورت سیکس کریں تو کسی کو اعتراض نہیں ہونا چاہیے کیونکہ یہ انسان کا بنیادی حق ہے.

یہ پاکستان میں ایک گمنام عورت تھی جو پیسے لے کر برطانیہ میں ہمجنس پرستی کی تبلیغ کرتی تھی. برطانیہ میں ھیومینی ٹیریئین یوکے نامی تنظیم ہم جنس پرستی کےلیے سب سے زیادہ متحرک ہے. اس کا چیئرمین اینڈریو کوپسن تھا اس وقت. یہ شخص ہم جنس پرستی کو ایک مقدس اور اچھا عمل کہتا تھا. گلالئی اسماعیل صرف دولت کمانے کےلیے اینڈریو کوپسن کے گندے اور آلودہ نظریات لوگوں میں پھیلایا کرتی

گلالئی اسماعیل کی ایک اپنی بھی این جی او تھی جس کا نام “آگاہ لڑکیاں” یے. لڑکیوں کی آگاہی کے نام پہ یہ این جی او یہ آگاہی دیتی رہی کہ سیکس کے محفوظ طریقے کیا ہوتے ہیں. یعنی اگر لڑکیاں جنسی عمل کریں تو وہ کس طرح ایڈز اور حمل سے محفوظ رہ سکتی ہیں. اس آگاہی کے بدلے اس شیطانی این جی او کو دنیا کی 19 تنظیمیں باقاعدگی سے فنڈز دیتی رہیں. دولت کی ہوس وقت کے ساتھ بڑھتی جاتی ہے لہٰذا گلالئی اسماعیل کی فنڈز کےلیے بھوک میں اضافہ ہو گیا اور اس دوران نر پشتین سادہ لوح لوگوں کو حقوق کے نام پر اپنے پیچھے لگا چکا تھا

جب پی ٹی ایم کا فتنہ پاکستان میں جاگا گلالئی اسماعیل اچانک سے منظرِ عام پہ آ گئی. منظور پشتین کے پیچھے چلنے والوں نے صرف اتنا دیکھا کہ گلالئی اسماعیل پی ٹی ایم کےلیے بول رہی ہے لہٰذا اسے سر پہ بٹھا لیا. گلالئی اسماعیل کو پاکستان میں ایک ایسا گروہ چاہیے تھا جو اس کی حمایت کرتا ہو. وہ مغرب میں یہ دکھاوا کرنا چاہتی تھی کہ وہ پاکستان کی مقبول شخصیت ہے جس کی بات لوگ سنتے ہیں. لہٰذا اگر وہ پاکستان میں ہم جنس پرستی کی بات کرے تو لوگ اس کی بات سنیں گے. اس سے گلالئی کو پاکستان میں کام کرنے کےلیے مغرب سے فنڈ ملتا جو کروڑوں روپے ہوتا

عام لوگوں میں سے کسی کو نا تو گلالئی کے ماضی کا علم تھا نا ہی اس کی گندی نیت کا، البتہ منظور نر پشتین اس کے بیہودہ ماضی سے مکمل آگاہ تھا. لیکن وہ جانتا تھا کہ اگر گلالئی کی اصلیت لوگوں کو پتہ لگی تو اس کے لوگ اس کا ساتھ چھوڑ دیں گے. اس لیے نام نہاد نر پشتین ایک خاموش سمجھوتے کے تحت گلالئی اسماعیل کے آگے جھک گیا.

وہ سمجھوتہ یہ تھا کہ گلالئی اسماعیل منظور پشتین کے لوگوں کے زریعے مغربی ملکوں کو اپنا مقبول چہرا دکھائے گی. اور اس کے بدلے میں جو کچھ منظور پشتین اسے کہے گا وہ مغرب میں وہی کہے گی. اب پاکستان مخالف ہر بین الااقوامی چینل اٹھا کر دیکھ لیں جہاں منظور پشتین ہو گا وہاں گلالئی ہو گی. کام کاروبار دونوں کا چل رہا ہے مگر نقصان اس قوم اور اس ملک کا ہو رہا ہے

منظور پشتین کے پیچھے چلنے والوں کو بس اتنا کہوں گا کہ تم لوگ ایک ایسی عورت کے پیچھے چل رہے ہو جو پیسوں کے بدلے ہم جنس پرستی کی تبلیغ کرتی ہے. تمہاری غیرت بے غیرتی میں کب بدل گئی ؟؟؟
سنگین علی زادہ


Sharing Services
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here