پاک فوج انڈیا کی پراکسی جنگ کا جواب انڈیا میں ہی کیوں نہیں دیتی ؟؟؟

آپ کا وزیرخارجہ امریکہ میں بیٹھ کر حافظ سعید کو دہشت گرد قرار دیتا ہے اور اقرار کرتا ہے کہ وہ پاکستان سے باہر بھی دہشت گردی کرتا ہے۔ حافظ سعید کا قصور صرف یہ ہے کہ وہ کشمیر کے لیے آواز اٹھاتا ہے۔

0
516

پاک فوج انڈیا کی پراکسی جنگ کا جواب انڈیا میں ہی کیوں نہیں دیتی ؟؟؟

پراکسی جنگیں ہمیشہ سول حکومت کے تعاؤن سے لڑی جاتی ہیں۔ انڈیا نے پاکستان میں اس لیے تہلکہ مچا رکھا ہے کہ انکی سول حکومت، فوج اور میڈیا پاکستان کے خلاف ایک پیج پر ہیں۔

لیکن یہاں حال بلکل مختلف ہے۔

ڈان لیکس آپ کو یاد ہوگا۔ اس میں آپ کی منتخب جمہوری حکومت نے خود آپ ہی کی فوج پر دوسرے ملکوں میں دہشت گردی کا الزام عائد کر دیا تھا اور انکو دہشت گردوں کا سرپرست قرار دیا تھا۔

منتخب جمہوری حکومت کے اہم اتحادی محمود اچکزئی اور جے یو آئی کے مولانا شیرانی پاک فوج پر تنقید کرتے ہوئے فرماتے ہیں کہ پاک فوج کو ” گڈ طالبان” نامی پالیسی ترک کر کے ہر قسم کے طالبان کے خلاف آپریشنز کرے۔

آپ کا وزیرخارجہ امریکہ میں بیٹھ کر حافظ سعید کو دہشت گرد قرار دیتا ہے اور اقرار کرتا ہے کہ وہ پاکستان سے باہر بھی دہشت گردی کرتا ہے۔ حافظ سعید کا قصور صرف یہ ہے کہ وہ کشمیر کے لیے آواز اٹھاتا ہے۔

یہ حال ہے آپکی سول حکومت کا ۔۔۔۔۔۔۔۔

اور ان حالات میں آپ چاہتے ہیں کہ پاک فوج ٹی ٹی پی، بی ایل اے اور ایم کیو ایم کے جواب میں آزادی کشمیر، خالصتان اور نکسلائٹس تحریکوں کی مدد کرے؟؟

ابھی تو آپ کے منتخب حکمرانوں کے پاس آپ کے خلاف کوئی ثبوت بھی نہیں ہے اگر ثبوت ہاتھ آیا تو دیکھنا کہ یہ کیسے آپ کو پوری دنیا میں ننگا کرتے ہیں۔۔۔۔۔۔۔

تحریر شاہدخان

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here