پاکستان کی مثال حضرت موسیٰ کی سی ہے

0
419

پاکستان کی مثال حضرت موسیٰ کی سی ہے…… فرعون کو جب معلوم ہوتا ہے کے ایک بچہ پیدا ہو گا اس کے لیے وبال جان بنے گا تو اس نے سارے شہر کے بچے مارنے شروع کر دیے تاکہ اس کے لیے کوئی رکاوٹ نہ رہے جب کے حضرت موسیٰ کو چھوڑ دیا .اپنا بیٹا بنا کر رکھا پرورش کی.ہر طرز کی تربیت کی نان نفقہ کا خیال رکھا ….مگر وہی موسیٰ اس کے لیے موت اور زوال کا سبب بن گے ……ابھی بھی کچھ اس سے ملتی ہوئی صورت حال ہے…….آج کے دور کا فرعون امریکا بھی پاکستان کو پالتا رہا دنیا کو مٹاتا رہا اس غرض سے کے کوئی اس کے لیے خطرہ نہ بن سکے ……مگر ؟؟؟؟؟؟؟؟……………اب یہی پاکستان اس کے قابو سے باھر ہو رہا ہے …اس کے لیے وبال جان بن رہا ہے ..امریکن تجزیے نگاروں کے مطابق یہی پاکستان آیندہ ١٠ سالوں تک قابو نہ کیا گیا تو.بیحد خطر ناک ملک بن جائے گا……………شاہد اسی لیۓ اقبال نے آج سے ٨٠ سال پہلے فرما دیا تھا کے ٹوٹے گا اشیا سے سحرے فرنگی ……جب کے احدیث مبارکہ کے اندر بھی ہند کی جانب اشارہ کر کے فرما دیا گیا تھا کے ہند سے ٹھنڈی ہوا ا رہی ہے …..جب کے ایک حدیث کے اندر یہ تک فرما دیا گیا کے

………………………………….ابو ہریرہ بیان فرماتے ہیں حضور نے فرمایا کے جب بڑی بڑی لڑیاں ہوں گئیں تو الله عجمیوں سے ایک لشکر اٹھاےُ گا .جو عرب سے بڑھ کر شاہ سوار اور ان سے بہتر ہتھیار والے ہوں گے …الله ان ک زریعے دین کی مدد فرماے گا.
دوستو ……اس وقت مشرق وسطیٰ کی کنجی پاکستان کے ہاتھ میں آ رہی ہے..جب پاکستان بن رہا تھا تو اس وقت بھی اسرائیل کے پہلے وزیراعظم کا پہلا بیان جو کہ آج بھی ریکارڈ پر ہے، یہ دیا کہ ”دنیا میں ہمارا کوئی دشمن نہیں سوائے پاکستان کے.
اب پاکستان اچھا ہے برا ہے….غریب ہے یا بدحال اس الله اور نبی کے قلعہ کی حفاظت کرو……اس وجہ سے کیوں کے یہ اس وقت اس دجال کے چیلوں کے گلے میں ہڈی بن کر پھنسا ہوا ہے نہ نگل سکتے ہیں نہ اگل ………….اگر یہ پتھر بیچ میں سے نکل گیا تو اس کے بعد دوشمن اپنے ناپاک عزائم کی خاطر ہر وہ خطرناک ہتھیار استمال کرے گا.جو اس نے جمع کر رکھے ہیں.

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here