میں پاکستانی مسلمان ہوں …. ساری دنیا کا درد سینے میں محسوس کرتا ہوں

0
80
Sharing Services
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

میں پاکستانی مسلمان ہوں …. ساری دنیا کا درد سینے میں محسوس کرتا ہوں
مگر دنیا میں کوئی بھی ہمارا درد محسوس نہیں کرتا
یہ میں ہی ہوں جو ملت ملت کی گردان کرتا ہوں
دنیا کے کسی بھی کونے میں موجود مسلمان کو سوئی چبھنے پہ بھی بے قرار ہو جاتا ہوں , دعائیں کی جاتی ہیں , کوششیں کی جاتی ہیں , دستے روانہ کئے جاتے ہیں میانمار میں ظلم ہو تو وہاں کے مسلمانوں کو امداد دینے پاکستان سے لوگ جاتے ہیں , بوسنیا کے مسلمانوں کی حالت زار پہ دکھی ہوکر یہاں سے جو فوجی جاتے ہیں وہ سربوں کو انکے ظلم کی سزا دینے کی پوری کوشش کرتے ہیں , مصر پہ اسرائیل حملہ کرے تو طیارے پاکستان سے روانہ ہوتے ہیں , سعودیہ میں جاری شورشوں کو قابو کرنے کے لئے ہم سے مشورے لئے جاتےہیں , کعبہ پہ دہشتگردوں کا حملہ ہو تو ابابیل پاکستان سے جاتے ہیں , کشمیر , شیشان, چیچنیا , , فلسطین , افغانستان , یہاں تک کہ عراق میں بھی مظلوم مسلمانوں کی مدد کو یہ پاکستانی ہی پہنچتے ہیں , باقی کوئی ملک آگے نہیں آتا کسی کو ملت یاد نہیں رہتی
سعودیہ والے سعودی نیشنل انٹرسٹ چاہتے ہیں
ایران والے ایرانیوں کے مفاد
ترکی والے ترکوں کی
مصر والے مصر کی
ملائشیا کو اپنی معشیت عزیز
سارے اسلامی ملکوں کے نزدیک انکے مفاد عزیز , کسی کو امت کا دکھ نہیں , ہاں اگر کسی کو ہے تو وہ پاکستانی ہیں , جو خود تو لہولہان ہوتے ہیں مگر شام میں ظلم کا سنتے ہی اپنے زخم بھول کر شام والوں کے لئے رنجیدہ ہوتے ہیں , محلے کا ایک ان پڑھ ریڑھی والا بھی کشمیر و فلسطین پہ ہوے مظالم پہ رنجیدہ نظر آتا ہے , یہ دکھ , یہ درد , یہ امت کا خیال یہ صرف پاکستان میں ہی اتنا کیوں ہے ؟ ..
پاکستانیوں کے ہی دل امت کی حالت پہ خون کے آنسو کیوں روتے ہیں
یہ نظریہ پاکستان ہی ہے جس نے قومیتوں , نسلوں , زبانوں سے نکال مسلمانوں کو ملت کی پہچان کروائی آج جو امت مسلمہ کا تھوڑا بہت تصور باقی ہے وہ اسی نظرئے کی دین ہے
باقی تو سب بھول بیٹھے ہیں , بس آپ کو ہی امت یاد ہے , آپ کو یہ بھولنا نہیں , یہ تصور باقیوں کو بھی یاد کرانا ہے
اللہ امت مسلمہ کے حال پہ رحم فرمائے


Sharing Services
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here