مک مکا ۔۔۔۔۔۔!

0
1238
مک مکا ۔۔۔۔۔۔!

زرداری کے نواز مخالف بیانات پر کس کس کو یقین ہے؟ ۔۔۔۔ 

تھوڑی انفو شیر کرتے ہیں۔ 

کرپشن کے خلاف 2003 میں اقوام متحدہ میں ایک عہد نامے ( کنونشن) پر دستخط کیے گئے جس کے مطابق رکن ممالک مطلوبہ ” ثبوت ” پیش کیے جانے پر لوٹی ہوئی رقم واپس کرنے کے پابند ہونگے۔ اس کو سٹولن ایسٹ ریکوری اینیشیٹیو کہتے ہیں۔

جس ملک نے اپنا مال ریکور کرنا ہے اس نے صرف دو کام کرنے ہیں۔

پہلا ۔۔ مال اس شخص کی ملکیت ثابت کرنا ہے۔

دوسرا ۔۔۔ ملک کی سب سے بڑی عدالت ( سپریم کورٹ ) اس ملک کو لکھ کر دے دے کہ ہمیں اس رقم کا منی ٹریل پیش نہیں کیا گیا۔

اس کے بعد دوسرا ملک وہ رقم واپس کرنے کا پابند ہوگا۔

اس سلسلے میں نائجیریا کے سابق صدر سنی اباچا کے 1200 ملین ڈالر نائجیریا کو واپس کیے جا چکے ہیں حالانکہ سنی اباچا کا بیٹا پکارتا رہ گیا کہ یہ رقم ہمیں ہمارے دادا سے ورثے میں ملی اور ہمارے باپ کا اس سے کوئی لینا دینا نہیں۔۔۔۔۔ دماغ میں کوئی گھنٹی بجی ہے؟ ۔۔۔ حسین نواز اور دادا ھمممم 

اس عہد نامے پر 76 ممالک نے دستخط کیے بشمول انگلینڈ، امریکہ، عرب ممالک اور پاکستان کے۔

اب ہوا یہ ہے کہ ۔۔

” الحمد اللہ آف شور کمپنیاں ہماری ہیں ” کہہ کر ملکیت تسلیم کی جا چکی ہے ۔۔ 

پاکستان کی سب سے بڑی عدالت ( سپریم کورٹ ) فیصلہ سنا چکی ہے کہ ” ہمیں منی ٹریل نہیں ملی ” ۔۔۔

اقاموں کا انکشاف ہوچکا جس کی وجہ سے سوئسزرلینڈ کے اکاؤنٹس میں موجود اربوں ڈالر غیر محفوظ ہو چکے۔
چین بھیجے جانی والی رقوم کا انکشاف ہوچکا۔
اور انگینڈ میں اب تک 340 مختلف پراپرٹیز کا انکشاف ہوچکا ہے۔

یہ سب کچھ نواز شریف کو ہاتھ سے جاتا نظر آرہا ہے ۔۔۔۔۔۔

نواز شریف ویسے ہی پاکستان توڑنے کے بیانات نہیں دینے لگا ہے۔ اس وقت حقیقی معنوں میں اسکا دماغ خراب ہوچکا ہے۔

لیکن زمین صرف نواز شریف کے پیروں تلے نہیں کھسک رہی۔ آصف زرداری کو بھی دنیا تاریک ہوتی نظر آرہی ہے۔

جو جے آئی ٹی نواز شریف کا کچا چھٹا صرف 60 دن میں کھول کر رکھ سکتی ہے اس کو زرداری کی تلاشی لینے میں کتنی دیر لگے گی۔

جبکہ آپ کا یہ خادم بھی کچھ دن پہلے زرداری کے کچھ بینک اکاونٹس اور بیرون ملک سرمایہ کاری کی تفصیلات شیر کر چکا ہے۔۔۔۔ 

کیا آصف زرداری جے آئی ٹی کو بتا پائنگے کہ محض ایک سینما سے 26000 ملین ڈالر کے قریب اثاثے کیسے بن گئے؟؟

زرداری اور نواز شریف کی جان ایک دوسرے میں ہے۔ اس وقت وہ نواز شریف کو نہیں خود کو بچانے پاکستان آیا ہے۔ اور بچنے کی یہ کوشش دونوں ملکر کریں گے چاہے بظاہر ایک دوسرے کو جتنی مرضی گالیاں دے لیں۔

کچھ دن پہلے سینیٹ کے پونی والے چیرمین رضا ربانی نے نواز شریف کے حق میں بیان ویسے ہی نہیں دیا تھا۔

انکے پاس ایک آپشن آرٹیکل 62/63 میں ترمیم کا ہے جس کے تحت نواز شریف نااہل ہوا ہے۔
آصف زرداری بیان دے سکتے ہیں کہ چونکہ یہ پیپلز پارٹی کا پرانا موقف ہے اس لیے نواز شریف کو بچانے نہیں محض اپنے پرانے موقف کی وجہ سے اس آرٹیکل میں ترمیم پر تیار ہیں۔

اس کے علاوہ ان کے پاس کیا کیا آپشنز ہیں۔ شائد کشمیر میں گڑبڑ ؟؟  اس پر تفصیل سے لکھونگا ان شاءاللہ ۔۔۔

خون چوسنے والی طفیلی جماعتیں انکا ساتھ دینگی خاص کر قوم پرست جماعتیں۔ فضل الرحمن کے پاس شائد یہ آخری موقع ہو خود کو ان سے الگ کرنے کا۔

ان سب کو اس بات کا یقین ہے کہ جس ان دیکھے جال میں یہ سب بتدریج پھنستے چلے جارہے ہیں یہ پاک فوج کا بنا ہوا ہے۔

مجھے ایسا نہیں لگتا۔ میرے خیال میں تو یہ اللہ کی رسی ہے جو کھینچی جا رہی ہے۔ اس لیے یہ جو مرضی کرلیں ان شاءاللہ اس بار نہیں بچیں گے۔

تحریر شاہدخان

 

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here