مدینہ ثانی کے خلاف ایسے وقت میں کفر و یہود کا اکھٹا ہو جانا یقیننی تھا چنانچہ وہی ہوا

0
172

تم اہل ایمان سے دشمنی کرنے میں سب لوگوں سے
زیادہ سخت ترین دشمن یہودیوں اور مشرکوں کو پاوء گے۔
(القرآن. 5:82)

گزشتہ چند ہفتے نا صرف پاکستان کے محافظوں کے لیے امتحان ثابت ہوئے بلکہ ہمیں اپنے دوست ممالک کو بھی پرکھنے کا موقع ملا۔

مدینہ ثانی کے خلاف ایسے وقت میں کفر و یہود کا اکھٹا ہو جانا یقیننی تھا چنانچہ وہی ہوا۔

بھارت اور اسرائیل نے مل کر رات کی تاریکی میں پاکستان پر میزائل حملے کا پلان بنایا، حملے کے لیے بہاولپور اور کراچی کے چند مقامات سلیکٹ کیے گئے۔ جواب میں اسی وقت خفیہ اداروں نے حملے کی اطلاع پاکستان کے دفاعی اداروں کو پہنچا دی جس کے بعد ان مقامات پر ائیرڈفینس سسٹم پہنچا دئیے گئے۔

بھارت اور اسرائیل کے درمیان راجھستان ہیڈ کوارٹر کے اندر ہونے والے فیصلے کو درست طریقے سے ٹریک کر لینا آئ ایس آئ کی صلاحیتوں کا وہ ثبوت تھا جس پر دشمن بھی حیران رہ گیا۔

حملے کی اطلاع ملتے ہی مسلح اداروں نے اپنی تیاری مکمل کر لی لیکن اصل امتحان حکومت کا تھا، لہزا حکومتی عہدہ داروں نے فوری طور پر عالمی رہنماوں کو صورتحال سے آگاہ کیا اور انہیں اپنی جوابی کاروائ کے بارے بھی خبردار کیا۔

بھارت جو پاکستان کو سرپرائز دینے والا تھا، اپنے فیصلے کے چند لمحوں بعد ہی راز فاش ہونے پر سٹپٹا کر رہ گیا۔ اور حملہ منسوخ کر دیا۔

اس دوران بھارتی فوج کی نقل و حرکت نوٹ کرنے میں پاکستان کے بنے ڈرونز نے بھی اہم کردار ادا کیا۔

پاکستان کو ایک بڑی تباہی سے بچانے کا تمام تر کریڈٹ افواج پاکستان، حکومت پاکستان اور اپوزیشن کی بالغ نظری کو جاتا ہے۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here