مجھے آج تک اس منافقت کی سمجھ نہیں آئی کہ ” میں ن لیگ کا اتحادی ہوں لیکن اسکی پالیسیوں کا مخالف ” ۔۔۔۔۔۔۔ حد ہے بے شرمی کی۔

یہ دعوی مولانا فضل الرحمن اور مولانا ساجد میر کا ہے۔

0
1119
Sharing Services
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

مجھے آج تک اس منافقت کی سمجھ نہیں آئی کہ ” میں ن لیگ کا اتحادی ہوں لیکن اسکی پالیسیوں کا مخالف ” ۔۔۔۔۔۔۔ حد ہے بے شرمی کی۔ 

یہ دعوی مولانا فضل الرحمن اور مولانا ساجد میر کا ہے۔ 

لبرل نواز شریف اور سیکولر ملاؤوں کی اتحادی حکومت میں پاکستانی میڈیا نے فحاشی کی تمام حدیں عبور کر لیں ہیں۔ 

ایک دو مثالیں پیش کرتا ہوں۔

مزاحیہ ڈراما سیریل بلبلے کا سین ۔۔ !

نبیل ۔۔۔ ” امی اور محمود صاحب آپ دنوں کہاں گئے تھے؟”

مومو۔۔۔ ” ہم وہ کرنے گئے تھے”

نبیل ۔۔۔۔۔ ” وہ کیا؟”

مومو ۔۔۔۔۔۔ ” وہی جو سارے میاں بیوی شادی کے بعد کرتے ہیں”

نبیل شرمندہ ہوکر ۔۔۔۔۔۔ ” لان میں ؟”

پھر محمود صاحب سے مخاطب ہوکر ۔۔۔۔ ” محمود صاحب میری امی تو معصوم ہے آپ ہی کچھ خیال کر لیتے” ۔۔۔۔۔۔۔۔۔

یہ ایک ہلکا پھلکا فیملی ڈراما سمجھتا جاتا ہے۔۔۔۔

ایک دوسرا ڈرامہ ہے ” مبارک ہو بیٹی ہوئی ہے” ۔۔۔۔۔ اس ڈرامے میں سوتیلے بہن بھائی نے آپس میں شادی کر لی ہے۔

کچھ عرصہ پہلے ہم ٹی وی پر ’کتنی گرہیں باقی ہیں‘ میں ’چیونگم‘ عنوان سے ایک قسط نشر ہوئی، جس میں ہم جنس پرستی کے موضوع پر مبنی مواد نشر کیا گیا۔

کہتے ہیں ” مولانا اس لیے اسمبلی میں بیٹھا ہے کہ کہیں اسلام کے خلاف کوئی بل منظور نہ ہوجائے ” ۔۔۔۔۔۔۔

یہ جو بل منظور کیے بغیر ہو رہا ہے اسکا کیا؟؟

ویسے ” بل ” کے معاملے میں بھی مولانا کو ہم نے دیکھ لیا۔۔۔ 

رضا ربانی جیسا سیکولر چیرمین سینیٹ سے واک آؤٹ کر گیا تو جے یو آئی کے عبدلغفور حیدری نے آگے بڑھ کر چیر سنبھالی اور وہ بل منظور کروایا جس سے آج اپنی برات کا اعلان کر رہے ہیں۔

سنا ہے منافقین دوزخ کے سب سے نچلے حصے میں ہونگے۔ اور فرعون، قارون اور ابوجہل جیسے خدائی کے دعویداروں پر بھی ان کے مقابلے میں کم عذاب ہوگا۔۔۔۔۔۔۔ !!

دور جدید کے ان منافق ملاوؤں سے اللہ کی پناہ مانگتا ہوں۔

تحریر شاہدخان


Sharing Services
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here