ففتھ جنریشن ڈاکٹرائن یعنی پانچویں نسل کی جنگ

0
585

ففتھ جنریشن ڈاکٹرائن
یعنی
پانچویں نسل کی جنگ

پانچویں نسل کی جنگ ایک غیر روایتی جنگ ہے جس میں دشمن اسلحہ و بارود یا میزائل لے کر آپ کی جغرافیائی سرحدوں پر حملہ آور نہیں ہوتا بلکہ اُس کے ہتھیار کچھ اور ہی طرز کے ہوتے ہیں اس جنگ کے خفیہ ہتھیاروں میں نظریاتی تصادم،فرقہ وارانہ فسادات اور صوبائی یا علاقائی تعصب شامل ہے.
پانچویں نسل کی اس جنگ میں ریاستوں کو اندر سے برباد کیا جاتا ہے معیشت ،امن و امان ، انارکی اور مصنوعی بحران پیدا کیے جاتے ہیں نظریاتی ،لسانی،فرقہ وارانہ اور سیاسی اختلافات کو بڑھایا جاتا ہے فوج کو اندرونی مسائل میں الجھا کر اسی محاذ پر برباد کر دیا جاتا ہے یعنی ناکام ریاست

اِن سب خفیہ ہتھیاروں کو لانچ کرنے میں الیکٹرانک ،پرنٹ اور سوشل میڈیا کا کلیدی کردار رہا ہے
نظریاتی تصادم———–
سب سے پہلے آتے ہیں نظریاتی یلغار کی طرف اس میں سب سے پہلے آپ کی نظریاتی جڑوں کو کاٹا جاتا ہے پرنٹ اور الیکڑانک میڈیا میں بیٹھی کالی بھیڑوں(ففتھ کالمسٹ) کو خریدا جاتا ہے ان ففتھ کالمسٹ یا میڈیا پرسنز کا کام حساس موقعوں پر مایوسی، افراتفری اور اختلاف کو ابھار کردشمن کے لئے موزوں حالات پیدا کرنا ہوتا ہے ان کے اولین مقاصد میں جنگ میں مصروف فوج پر تنقید کرنا ،ملک کی ترقی اور مفاد کے منصوبوں پر عوام میں شکوک وشبہات پیدا کرنا اور ڈس انفارمیشن پھیلاناشامل ہے الغرض منفی پروپیگنڈے کو اتنا طاقتور بنا کر پیش کیا جاتا ہے کہ عوام اسی کو سچ مان لے
فرقہ وارانہ فسادات ———-
یہ کام فرقہ پرست پاکستان دشمن سے لیا جاتا ہے جو دشمن سے اپنی قیمت وصول کرنے کے بعد اسلامی نظریاتی سرحدوں کو نا قابلِ تلافی نقصان پہنچاتے ہیں یہ فرقہ پرستی کو ابھار کر عوام میں تصادم اور فساد پیدا کرنے کی کوشش کرتے ہیں اور اسی فرقہ پرستی کو بنیاد بنا کر بم دھماکوں کو جائز قرار دیتے ہیں

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here