فاٹا کے لوگوں کو تاریخ کا سب سے بڑا دھوکہ دینے والا محمود اچکزئی ہے جس کا منظور پشتین اس وقت دم چھلا بنا ہوا ہے۔

0
779

منظور پشتین قوم پرستوں کی کٹھ پتلی؟

اگر زیادہ حسن ظن سے کام لیا جائے تو یہ کہا جا سکتا ہے کہ منظور پشتین اپنے بچپنے اور کم عمری کی وجہ سے محمود اچکزئی اور عوامی نیشنل پارٹی جیسے خرانٹ لوگوں کے ہاتھوں استعمال ہو رہا ہے.
اگر وہ یہ بات نہیں جانتا تو احمق ہے اور اگر جانتا ہے تب یقیناً غدار ہے۔

کیا یہ بات حیران کن نہیں کہ ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

منظور پشتین فاٹا اصلاحات کا مطالبہ کرتا ہے مگر اب تک ان لوگوں کے خلاف ایک لفظ بھی نہیں بولا جو فاٹا اصلاحات بل کے سب سے بڑے مخالف ہیں۔ یعنی فضل الرحمن اور محمود اچکزئی۔

فاٹا کے تمام مسائل کا حل فاٹا اصلاحات بل کی صورت میں پیش کیا گیا۔ مگر محمود اچکزئی نے اس کی اعلانیہ مخالفت کر کے فاٹا کے عوام سے دشمنی کا ثبوت دیا۔ جس کے بعد فاٹا کے عوام میں محمود اچکزئی کے خلاف غم و غصہ پھیل گیا تو اس وقت منظور پشتین کو آگے کر دیا گیا۔ منظور پشتین اگر فاٹا اصلاحات چاہتا ہے تو ان لوگوں کے ساتھ کیا کر رہا ہے جو فاٹا اصلاحات کے سب سے بڑے دشمن ہیں؟؟

فاٹا کے لوگوں کو تاریخ کا سب سے بڑا دھوکہ دینے والا محمود اچکزئی ہے جس کا منظور پشتین اس وقت دم چھلا بنا ہوا ہے۔

یاد رکھیں محمود خان اچکزئی اور ان جیسے نام نہاد قوم پرستوں کی ساری سیاست فاٹا مسائل کے نام پہ فاٹا عوام کو بے وقوف بنانے پہ منحصر ہے۔ فاٹا اصلاحات کے معاملے پر وہ سارے بے نقاب ہوگئے جس کے بعد منظور پشتین نامی مہرے کو آگے کر دیا گیا۔

منظور پشتین دعوی کرتا ہے کہ وہ غیر سیاسی تحریک چلا رہا ہے. لیکن اچکزئی کے ساتھ اسکی تصاویراس دعوے کو جھوٹا ثابت کر رہی ہیں. سچائی یہ ہے کہ 24 سالہ منظور پشتین نا پختگی اور نا تجربہ کاری کی وجہ سے اچکزئی اور اس جیسے پرانے سیاست دانوں کے ہاتھوں استعمال ہو رہا ہے۔ منظور پشتین کے اشتہارات میں اے این پی کے عہدہ دار محسن داور اور محمود اچکزئی کے ساتھی علی وزیر کی تصاویر ہیں. اگر یہ واقعی غیر سیاسی ہے تو سیاست دان کیوں اس کی تشہیری مہم کا حصہ ہیں؟

اپنے باپ کی عمر کے آدمی کو اپنے پیروں میں بٹھاکر اور پشتون خواتین کو آزادی کے نام پر سیاسی مقاصد کے لیے استعمال کرنے کا اعلان کرنے والا پشتین پشتون روایات کی توہین کر رہا ہے۔
“گرانہ وطنہ جینکئی بہ دی گٹینہ” ۔۔ غیرتی پشتون خو بہ دا کلہ ھم او نہ وائی۔۔۔۔

کیا واقعی منظور پشتین کو امریکہ، انڈیا اور افغان حکومت، این ڈی ایس کے سوشل میڈیا ایکٹیوسٹس، مشہور زمانہ گستاخان رسول، پاکستان کے متنازعہ ترین اینکرز، ڈان جیسے متنازعہ میڈیا چینلز اور الطاف حسین کی سپورٹ پر کوئی حیرانی نہیں ہو رہی؟؟

افغانستان میں بیٹھے افغانی وہاں سے منظور پشتین کے جھنڈے تلے پاکستان کے خلاف باقاعدہ اعلان جنگ کر رہے ہیں اور یہ احمق اس کو اپنی سپورٹ سمجھ رہا ہے۔

کیا یہ نہیں جانتا کہ آگ مزید تیز کرنے کے لیے وہ اس کو اس کے ساتھیوں سمیت مروا بھی سکتے ہیں ملالہ کی طرح۔ تاکہ پشتون جو تیزی سے اس سے بدظن ہونے لگے ہیں تو اس کو مروا کر دوبارہ انکی ہمدردی حاصل کی جاسکے اور کسی دوسری کٹھ پتلی کو آگے لایا جاسکے۔

پولیس انکاؤنٹر میں اب تک ہزاروں پنجابیوں کو قتل کیا جا چکا ہے جو آج بھی انصاف کے منتظر ہیں۔ لیکن نقیب اللہ کے قاتل پیپلز پارٹی جیسی طاقتور سیاسی جماعت کا منظور نظر راؤ انوار نہ صرف پاکستان میں چوہے کی طرح پھنسا رہا بلکہ بالآخر عدالت کے کٹہرے میں بھی آگیا۔ اب دیکھنا ہے کہ اس پر منظور پشتین کیسا ردعمل دیتا ہے۔

منظور پشتین کے خلاف پاکستان بھر کے پشتون سوالات اٹھانے لگے ہیں۔ اس کو پاکستان دشمنوں کے چنگل سے نکلنا ہوگا۔ ورنہ وہ جلد ہی ” نامنظور پشتین” ہوجائیگا۔
تب شائد بہت دیر ہوچکی ہو!

تحریر شاہدخان

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here