فاٹا انضمام پر چند دن کی خاموشی کے بعد پسکین تحریک نے اپنا نیا ڈرما لانچ کیا ہے کہ

0
684

تازہ واردات ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

فاٹا انضمام پر چند دن کی خاموشی کے بعد پسکین تحریک نے اپنا نیا ڈرما لانچ کیا ہے کہ ۔۔۔۔۔۔۔

” پی ٹی ایم کے لیڈروں پر فوجیوں کے بھیجے ہوئے طالبان نے حملہ کر دیا، لیکن مجال ہے جو کسی “بڑے” لیڈر کو خراش بھی آئی ہو، البتہ عوام میں سے چند لوگ زخمی ہوئے ہیں۔ تھوڑی دیر بعد فوج آئی اور فوج نے عوام پر حملہ کر دیا “

یہ کھیل سقوط ڈھاکہ سے کھیلا جا رہا ہے،

دہشت گرد بھیجو،
عوام کو مرواؤ،
شور مچاؤ کہ دہشت گردی کے پیچھے فوج ہے،
اور جب فوج دہشت گردوں کو مارے تو کہو کہ فوج عوام کو مار رہی ہے،

پاکستان دشمنوں نے فاٹا، کراچی اور بلوچستان میں یہی کچھ کیا۔

ٹی ٹی پی، بی ایل اے اور ایم کیو ایم کی مدد سے عوام کو مروایا،
شور مچایا کہ فوج کروا رہی ہے،
فوج نے آپریشن کر کے تینوں دہشت گرد تنظمیوں کی گردنیں مروڑیں تو واویلا کرنے لگے کہ فوج عوام کو مار رہی ہے۔

مارے یا بھاگے ہوئے دہشت گرد مسنگ پرسنز اور ان کے لواحقین مظلوم کہلائے!

حضورﷺ نے فرمایا ہے کہ ” مسلمان ایک سوراخ سے دو بار نہیں ڈسا جا سکتا ” لیکن شائد ہم مسلمان نہیں ہیں۔

پسکین کا ساتھ دینے والوں میں سے اگر کوئی ایک بھی مسلمان بچا ہے تو وہ اس “اتفاق” پر ضرور غور کرے کہ ۔۔۔۔۔۔۔

پسکین تحریک والے اچانک اسرائیلی آرمی زندہ باد کا نعرہ بلند کرتے ہیں،
پھر سوشل میڈیا پر زور و شور سے خود کو نسلاً اسرائیلی اور یہودی قرار دے کر اس پر فخر کرتے ہیں،
جواباً اسرائیل کے اندر تقریبات میں یہودی پشتونوں کو اپنا ہم نسل قرار دے کر پشتین تحریک اور پختونستان کے نعرے لگاتے ہیں،
اور پھر سوشل میڈیا پر اسرائیلی آرمی کی افغانستان میں آنے کی خبریں گردش کرتی ہیں۔

لیکن یہ جو مرضی کر لیں ہم اپنے ملک اور اپنی افواج کے ساتھ ہیں ان شاءاللہ!

تحریر شاہدخان

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here