عمران خان مخالفین پر کرپشن، دھاندلی یا کام چوری کے الزمات لگاتا ہے لیکن کبھی کسی کی نجی زندگی پر انگلی نہیں اٹھائی۔

0
958

عمران خان مخالفین پر کرپشن، دھاندلی یا کام چوری کے الزمات لگاتا ہے لیکن کبھی کسی کی نجی زندگی پر انگلی نہیں اٹھائی۔ 

شریف خاندان، بھٹو خاندان اور فضل الرحمن کی ” شرافت ” کے قصے زبان زد عام ہیں اور خاصے واضح شواہد کے ساتھ۔۔۔۔ 

لیکن عمران خان کی زبان سے آج تک ان کے بارے میں ایک لفظ نہیں سنا۔ خان کے اس ظرف کی داد نہ دینا زیادتی ہوگی۔ 

لیکن باقیوں کا حال یہ ہے کہ ۔۔۔۔۔

ذولفقار علی بھٹو نے انتخاب جیتنے کے لیے فاطمہ جناح پر تہمت لگا دی تھی۔

نواز شریف مولانا سمیع الحق پر تہمت لگا چکے ہیں اور جہازوں سے خواتین کی ننگی تصاویر گرانے کا مشہور عام واقعہ اپ نے سنا ہوگا۔

فضل الرحمن کو تو اس کے سوا کچھ آتا ہی نہیں۔ یہ بدبخت ملا اب تک جتنے لوگوں پر تہمت لگا چکا ہے اگر شرعی اصول مد نظر رکھا جائے تو جھوٹے بہتان کے ضمن میں یہ لاکھوں کوڑے کھانے کا حق دار ہے۔ پاکستان میں غالباً سب سے غلیظ زبان مولانا کے پیروکار استعمال کرتے ہیں۔

دھرنے میں ناچنے والی جن خواتین کا یہ طعنہ دیتے ہیں وہ نہ عمران خان کی فرمائش پر ناچی ہیں اور نہ ہی ان کو عمران خان کہیں باہر سے لاتا ہے۔ وہ اسی قوم کی بہو بیٹیاں ہیں۔

اور یاد رکھیں ۔۔۔۔۔۔۔۔۔ قوم کی تربیت صاحب اقتدار کے ہاتھوں میں ہوتی ہے۔ انکے ناچنے کے ذمہ دار پارلیمنٹ میں بیٹھے حکمران ہیں۔

جو سارے کے سارے کردار کے لحاظ سے عمران خان کے مقابلے میں بونے نظر اتے ہیں

تحریر شاہدخان

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here