علامہ اقبال 1937 میں لڑے جانے والا الیکشن ہار گئے تھے؟

0
1210
Sharing Services
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

کیا واقعی جمہوریت بہترین طریقہ انتخاب ہے؟

زر اور صرف زر پر انحصار کرنے والے اس طریقہ انتخاب میں کسی بھی شریف اور ایماندر شخص کا منتخب ہونا تقریباً محال ہے۔

کیا آپ جانتے هیں؟

علامہ اقبال 1937 میں لڑے جانے والا الیکشن ہار گئے تھے؟

اس وقت وہ برصغیر تو کیا دنیا میں ایک بڑے مفکر اور ویژنری مانے جاتے تھے۔

ایک واقعہ کافی مشہور ہے۔

کسی دور میں میاں معراج خالد کسی مسلم لیگی کے خلاف الیکشن لڑ رہے تھے۔ موصوف اتنے ایماندار تھے کہ مخالف کے پاس کہنے کے لیے کچھ نہیں تھا تو اس نے جلسے میں تقریر کرتے ہوئے کہا ۔۔۔۔۔۔۔۔
” معراج خالد صاحب اتنے ایماندار ہیں کہ وہ پوری زندگی اپنے لیے کچھ نہ کرسکے آپ لوگوں کے لیے کیا کر لیں گے؟”

اور معراج خالد صاحب الیکشن ہار گئے 

ڈاکٹر عبدالقدیر کو محسن پاکستان مانا جاتا ہے لیکن مجھے یقین ہے کہ الیکشن لڑیں تو انکی ضمانت ضبط ہوجائے!!!

جمہوریت نے ہمیں ایک ایسا عجیب و غریب نظام دیا ہے جس میں ۔۔

سندھ کا منتخب وزیراعلی ایک غیر منتخب شخص کی ہدایت پر صوبہ چلا رہا ہے۔

پاکستان کا منتخب وزیراعظم ایک نااہل شخص کی ہدایت پر پورا ملک چلا رہا ہے۔

اور گمان غالب ہے کہ پاکستان کے سب سے بڑے شہر کراچی کو پاکستان کے مطلوب ترین شخص کی ہدایت پر چلایا جا رہا ہے۔

ویسے بھی ۔۔۔۔۔۔۔۔ بھلا وہ قوم کیسے ایک صحیح شخص کو متنخب کر سکتی ہے جو کتے کو ووٹ دینے پر آمادہ ہوجائے!

تحریر شاہد خان


Sharing Services
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here