عالمی اسٹیبلشمنٹ اور عمران خان

0
122
Sharing Services
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

عالمی اسٹیبلشمنٹ اور عمران خان ۔۔۔۔۔۔۔

میرا فارمولہ بہت سادہ ہے۔

میں ایک انٹرنیشنل اسٹیبلشمنٹ کا وجود مانتا ہوں جو پوری دنیا میں اپنی پالیسیز کو آگے بڑھا رہی ہے۔

اس انٹرنیشنل اسٹیبلشمنٹ کی کمانڈ یہودیوں کے پاس ہے کیونکہ عالمی مالیاتی نظام اور عالمی ذرائع ابلاغ پر یہودیوں کا کنٹرول ہے۔
( ان کو آپ جو مرضی نام دیں، عالمی صہیونی تحریک، فری میسنز، یہودی لابی یا کچھ اور )

بی بی سی، وائس آف امریکہ، الجزیرہ اور سی این این جیسے عالمی نشریاتی ادارے اور انسانی حقوق کی عالمی تنظمیں ان کے مفادات کے مطابق کام کرتی ہیں۔

میں بی بی سی، وائس آف امریکہ، جنگ، ڈان، ملالہ، وقاص گورایا، حامد میر اور مبشر زیدی جیسے لوگوں کو بغور سنتا ہوں اور باآسانی سمجھ لیتا ہوں کہ

عالمی اسٹیبلشمنٹ اس وقت کیا چاہتی ہے؟
اس کے مفادات کیا ہیں؟
ان مفادات کو پورا کرنے والے کون کون ہیں؟
اور ان مفادات کو خطرہ کہاں کہاں سے ہے؟

مثلاً ۔۔۔۔۔

اسلام
شعائر اسلام
مسلم قومیت یا نظریہ پاکستان
افواج پاکستان
مطالعہ پاکستان
کشمیر کا پاکستان سے الحاق
سی پیک
ڈیمز
بلین ٹری منصوبہ
فاٹا انضمام
افغان مہاجرین کی واپسی
پاک افغان سرحد پر باڑ
دہشت گردوں کی سزائیں
وغیرہ وغیرہ۔
یہ سب چیزیں ان کے نشانے پر ہیں جس سے مجھے اندازہ ہوا کہ یہ سب کسی نہ کسی طرح ان کے مفادات کے لیے خطرہ ہیں۔

ان ہی کی حمایت و مخالفت کرنے والوں کو دیکھ کر میں اندازہ لگاتا ہوں کہ کون کون عالمی اسٹیبلشمنٹ کے مفادات کے مطابق کام کر رہا ہے اور کون کون اس کے خلاف ہے۔ زبانی جتنا مرضی کوئی امریکہ اور یہودیوں کو گالیاں دے اور اسلام کے نعرے لگائے۔

تب میں نے ایک حیران کن چیز نوٹ کی۔

عمران خان

جن جن لوگوں اور اداروں کو میں عالمی اسٹیبلشمنٹ کے نمائندوں کے طور پر شناخت کر چکا ہوں وہ سب کے سب عمران خان کے سخت ترین مخالف ہیں۔

کیوں؟

کیونکہ پاکستان کی پوری سیاست میں یہ وہ واحد شخص ہے جو حقیقی معنوں میں ان کے مفادات پر ضرب لگا سکتا ہے۔ نہ صرف افغانستان اور سی پیک کے حوالے سے ان کی پالیسی پر بلکہ پاکستان کی تباہ ہوتی ہوئی معیشت کو نتائج کی پرواہ کی بغیر چند انقلابی فیصلوں سے واپس بھی لا سکتا ہے۔ یہ اہلیت پاکستان کے کسی اور سیاست دان میں نہیں ہے۔

اور خان کو خریدا بھی نہیں جا سکتا ۔۔ 

اس لیے عمران خان پاکستان کے حوالے سے ان کے مفادات کے لیے سب سے بڑا خطرہ بن سکتا ہے۔

البتہ عالمی اسٹیبلشمنٹ کے یہ سارے نمائندے نواز شریف کی کھل کر حمایت کر رہے ہیں اور عقل و بصیرت سے محروم تمام علماء بھی مریم نواز کے جھنڈے تلے کھڑے ہیں۔

کیوں؟؟ 

اسکا جواب آپ خود سوچیں۔

یہ ہے میرا فارمولہ پاکستان کے معاملے میں حق و باطل کو شناخت کرنے کا۔ اسی کے مطابق میں لوگوں کی حمایت اور مخالفت کرتا ہوں اور تب یہ نہیں دیکھتا کہ فلاں شخص نے کتنی بڑی داڑھی رکھی ہوئی ہے۔

تحریر شاہدخان


Sharing Services
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  
  •  

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here