تمہیں پتہ تک نہیں چلتا اور وہ تم پہ قربان ہو چکے ہیں۔

0
712

ساری زندگی گمنامی میں رہ کر تمہاری حفاظت کرنے والے عام طور پر گمنامی میں شہید ہو جاتے ہیں۔ تمہیں پتہ تک نہیں چلتا اور وہ تم پہ قربان ہو چکے ہیں۔ ہمارے فوجی جوان جب شہید ہوتے ہیں ہمیں پتہ ہوتا ہے کہ ہمارے لیے اور اس ملک کےلیے شہید ہوئے ہیں، ہم فخر سے دنیا کو بتا سکتے ہیں کہ دیکھو ہمارے دفاع پہ متعین کتنے شوق سے اللہ کی راہ میں جان دے دیتے ہیں۔ لیکن اس گمنام دستے کے لوگ وہ عظیم ترین مجاہد ہیں جن کی شہادت پر اکثر ہماری دعائیں بھی ان کو نہیں ملتیں، پتہ ہے کیوں؟ ہمیں پتہ ہی نہیں ہوتا وہ کب کس لمحے اللہ کی رضا کی خاطر ہم پر قربان ہو گئے ہیں۔

ان شہداء کا مقام و مرتبہ اتنا عظیم اور بلند ہے کہ تم گماں تک بھی نہیں کر سکتے۔ اور ان کا مقام ہمارے دلوں میں اتنا زیادہ کہ بیان کےلیے شائد لفظ بھی نہ مل پائیں۔ بڑا غریب سا محسوس کر رہا ہوں خود کو۔ دینے والے ہمارے لیے اپنی جان دے کر چلے جاتے ہیں اور ہم چاہنے کے باوجود فقط دعا کے سوا ان کو کچھ بھی نہیں دے پاتے۔ واقفِ حال لوگ جانتے ہیں، کچھ اس ملک کےلیے شہید ہوئے اور ان کے بیوی بچوں کو شہادت تک نہیں پتہ تھا کہ یہ عجیب و غریب سودا کر چکے ہیں۔ یہ اپنی جان کے بدلے ہماری بقاء اور ہماری حفاظت کا سودا کر چکے ہیں۔ کچھ ایسے بھی ہیں جو اپنی زندگی میں اپنے اہل و عیال سے وعدہ لے لیتے ہیں کہ دیکھو فرض بہت بھاری ہے۔ وعدہ کرو اگر کبھی میں فرض کی راہ میں قربان ہو گیا تو میرے بعد کبھی افسوس نہیں کرنا کہ بے مقصد جان سے گیا۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here