دنیا کا سب سے منحوس ، ڈھیٹ ، بے شرم اور بے غیرت جج پاکستان میں پایا جاتا ہے

0
399

دنیا کا سب سے منحوس ، ڈھیٹ ، بے شرم اور بے غیرت جج پاکستان میں پایا جاتا ہے ۔

آج سے کچھ عرصہ پہلے بلوچستان میں 30 معصوم اور بے گناہ پاکستانیوں کو بس سے اتار کر قتل کر دیا گیا اور ایک دہشت گرد گروہ نے فخریہ اس کا اعلان کیا کہ جو بھی پاکستانی ہاتھ لگے گا اسکا یہی حشر کریں گے ۔

ہمارے اس جج کے کان پر جوں تک نہیں رینگی بلکہ آج تک ان کا ذکر تک نہیں کیا گیا گویا کسی نے کیڑے مکوڑے مار دئیے ہیں ۔ اس دہشت گرد گروہ کے اعتراف کے باوجود ان میں سے پکڑے جانے والوں کو رہا کیا گیا کہ “ثبوت” نہ کافی ہیں !!!

دوسری طرف اسی دہشت گرد گروہ کے کوئی 30 کے قریب لوگ غائب ہیں تو یہ جج غیض و غضب میں پاگل ہو رہا ہے اور خود مدعی بن کر حکومت اور پاک فوج سے انکا مطالبہ کر رہا ہے ۔

اس معاملے میں اسکو کسی ” ثبوت ” یا دلیل کی ضرورت ہے نہ پرواہ اور نہ وہ لمبی لمبی تاریخیں دیتا ہے جس طرح زرداری کو خط لکھنے کے لیے اتنی لمبی تاریخیں دیں تھیں کہ اس میں دو سال نکلوا دئیے تھے اور سوئس عدالتوں کی دی گئی مہلت ختم کروا دی تھی ۔

وہ پاگل ہو چکا ہے اور بیک وقت پاک فوج اور حکومت دونوں کو دھمکیاں دے رہا ہے کہ مجھے ” میرے گروہ کے بندے دو ” ۔۔ تاکہ انکو ” قانونی طریقے ” سے رہا کر سکوں ۔

میرے خیال میں یہ جج بلکہ پاکستان کی پوری عدلیہ پاکستان کا ایک ایسا ادارہ ہے جو معیشت پر بلکہ معاشرے پر بوجھ ہیں ۔ انکی مثال خون چوسنے والی ان جونکوں کی سی ہے جو کوئی کام نہیں کرتیں بلکہ صرف دوسروں کا خون چوس کر گزارا کرتیں ہیں ۔

ایسی جونکوں کا علاج سب جانتے ہیں ۔

مجھے پہلی بار پاک فوج اور آئی ایس آئی کے ڈسپلن سے نفرت ہو رہی ہے ۔ یہ ادارے اتنا نہیں سمجھتے کہ قانون سے کھیلنے والے یہ ظالم لوگ کسی ڈسپلن اور قانون کے تابع ادارے سے نہیں ڈرتے بلکہ قانون سے ماوراء اندھی اور بے رحم طاقتوں سے ڈرتے ہیں ۔ اس معاملے میں پوری قوم افتخار چودھری نامی اس ڈرامے باز جج کی ہمت دیکھ چکی ہے جب دہشت گردوں نے اس کے منہ پر اعتراف کیا لیکن یہ چوں نہیں کر سکا ۔۔۔۔۔۔

میرا آج اس پولیس والے کے ہاتھ چومنے کو دل کر رہا ہے جس نے اس کے بال کھینچے تھے اور اسکے منحوس چہرے پر تھپڑ مارے تھے ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔!!!!

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here