خدا کے لیے پشتونو اپنے اوپر ترس کھاؤ۔ یہ ” پشتین و اچکزئی ” تمھیں دنیا میں بھی آگ و خون میں نہلا دینگے

0
704

خدا کے لیے پشتونو اپنے اوپر ترس کھاؤ۔ یہ ” پشتین و اچکزئی ” تمھیں دنیا میں بھی آگ و خون میں نہلا دینگے اور تمھاری آخرت بھی برباد کر دینگے۔

دیکھو حضورﷺ نے کیا فرمایا ہے ۔۔۔۔۔۔۔۔

’’میری امت کے دو گروہوں کو اللہ جہنم کی آگ سے بچائے گا۔ ایک وہ جو ہند میں لڑے گا اور دوسرا وہ جو عیسیٰؑ ابن مریم کے ساتھ ہوگا‘‘۔

’’حضرت ابو ہریرہؓ کہتے ہیں کہ حضورؐ نے ہم سے غزوہ ہند کا وعدہ فرمایا تھا۔ چنانچہ اگر میں اُسے پالوں تو اُس میں اپنا جان ومال لٹادوں۔ پھر اگر میں اُس میں مارا گیا تو میں بہترین شہید ہوں گا اور اگر میں لوٹ آیا تو میں آزاد ابوہریرہ ہوں گا‘‘

’’حضرت ابوہریرہؓ فرماتے ہیں کہ اس امت میں سندھ وہند کی طرف ایک لشکر روانہ ہوگا۔ اگر مجھے ایسے کسی مہم میں شرکت کا موقعہ ملا اور اس میں شریک ہوکر شہید ہوگیا تو ٹھیک۔ اور اگر میں لوٹ آیا تو میں آزاد ابوہریرہ ہوں گا جیسے اللہ نے جہنم کی آگ سے آزاد کردیا ہوگا‘‘۔

’’ضرور تمہارا ایک لشکر ہند سے جنگ کرے گا۔ اللہ ان مجاہدین کو فتح عطا کرے گا، حتیٰ کہ وہ ان کے بادشاہوں کو بیڑیوں میں جکڑ کر لائیں گے۔ اللہ اِن مجاہدین کی مغفرت فرمائیں گے۔ پھر جب وہ واپس پلٹیں گے تو حضرت عیسیٰؑ کو شام میں پائیں گے‘‘۔ اس پر حضرت ابوہریرہؓ نے کہا کہ اگر میں نے وہ غزوہ پایا تو اپنا نیا اور پرانا مال سب بیچ دوں گا اور اس میں شرکت کروں گا۔ پھر جب اللہ ہمیں فتح عطا کردے اور ہم واپس پلٹ آئیں تو میں ایک آزاد ابوہریرہ ہوں گا جو شام کے ملک میں اس شان سے آئے گا کہ وہاں عیسیٰؑ ابن مریم کو پائے گا۔ یا رسول اللہ! اُس وقت میری شدید خواہش ہوگی کہ میں اُن کے پاس پہنچ کر انہیں بتاؤں کہ میں آپؐ کا صحابی ہوں‘‘۔ یہ سن کر حضورؐ مسکرا پڑے اور ہنس کر فرمایا۔ بہت مشکل۔ بہت مشکل‘‘۔

’’بیت المقدس کا ایک بادشاہ ہند کی جانب ایک لشکر روانہ کرے گا۔ مجاہدین سرزمینِ ہند کو پامال کرڈالیں گے۔ اُس کے خزانوں پر قبضہ کرلیں گے، پھر وہ بادشاہ اُن خزانوں کو بیت المقدس کی تزیین وآرائش کے لیے استعمال کرے گا۔ وہ لشکر ہند کے بادشاہوں کو بیڑیوں میں جکڑ کر اپنے بادشاہ کے سامنے پیش کرے گا۔ اُس کے مجاہدین بادشاہ کے حکم سے مشرق ومغرب کے درمیان کا سارا علاقہ فتح کرلیں گے اور دجال کے خروج تک ہند میں قیام کریں گے‘‘۔

خدا کی قسم سوائے پاکستان کے اس وقت دنیا میں کوئی دوسرا اسلامی ملک موجود نہیں جو ان احادیث پر پورا اترتا ہو اور جس کی بیک وقت یہود و ہنود سے جنگ ہو۔

غزوہ ہند کا آغاز پراکسیز اور جھڑپوں کی شکل میں ہوچکا ہے۔ پاکستان کو اس جنگ سے قبل عصبیت کے جھنڈے تلے تقسیم کرنے کی کوشش کی جا رہی ہے۔

محمود اچکزئی نے مودی و نیتھن یاہو ( یہود و ہنود ) سے ملاقات کے بعد ” پشتین ” ٹائپ کے مہرے لانچ کر دئیے ہیں۔

خدا کا واسطہ ہے اس جنگ میں دوسری طرف سے مت آجانا۔ واللہ تم لوگ اللہ کے مقابلے میں جیت نہیں سکو گے۔ اس جنگ کا نتیجہ اللہ 1400 سال پہلے سنا چکا ہے۔

یہ تم سے یہی کہتے ہیں کہ ” ہم تو صرف یہ چاہتے ہیں” لیکن درحقیقت یہ اپنے مطالبات بڑھاتے چلے جائنگے یہانتک کہ کھل کر پاکستان کو توڑنے کا اعلان کر دینگے۔ یہ ظالم لوگ خوبصورت نعروں کے ذریعے تمھاری دنیا و آخرت دونوں برباد کردینا چاہتے ہیں۔

خود پر ترس کھاؤ۔ ان ظالموں کو پہچانو ۔۔۔۔۔۔۔۔۔

یاد رکھو ۔۔۔۔۔۔

“پاکستان دشمنی کفر تک لے جاتی ہے۔ یہ تمھیں گستاخان رسول اور سرخ کامریڈوں تک لے گئے ہیں۔ جلد ہی تم لوگوں سے ان حدیثوں کا بھی انکار کروا دینگے اور بلاآخر اسلام کا بھی ۔۔۔۔۔۔ یاد رکھنا ۔۔۔۔۔ !

تحریر شاہدخان

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here