خدا کا واسطہ ہے جج صاحب، یہ چیزیں چھوڑیں جو آپکی اصل ذمہ داری ہے وہ پوری کریں۔

0
903

پرسوں ہسپتالوں پر ایکشن،
کل پانی پر ایکشن،
اور آج دودھ پر ایکشن،

خدا کا واسطہ ہے جج صاحب، یہ چیزیں چھوڑیں جو آپکی اصل ذمہ داری ہے وہ پوری کریں۔

ایک سال تک عدالت میں ثبوت پیش نہ کر سکے،
پھر دو ماہ کے لیے وہ فیصلہ محفوظ کر دیا جو ہوا ہی نہیں تھا،
پھر جے آئی ٹی بنائی وہاں بھی ثبوت پیش نہیں کیے گئے،
پھر دوبارہ تحقیقات جج کی نگرانی میں،

پہلے روزانہ سماعت،
پھر ہفتہ وار تاریخیں،
اور اب ماہانہ،

وہ دھڑلے سے کہہ رہا ہے کہ اگر مال آمدن سے زیادہ ہے تو تمھیں کیا،
دستاویزات جعلی ثابت ہوگئیں جو بجائے خود جرم ہے،
اسحاق ڈار مجسٹریٹ کے سامنے دئیے گئے بیان سے پھر گیا،

لیکن دو سال ہونے کو آگئے کوئی جرم ثابت ہی نہیں ہورہا۔

دودھ ٹھیک کرنے کا شوق ہے تو سنائیں سزائیں ان دوکانداروں اور کمپنیوں کو جن کو آپ کے ججز اگلے دن ضمانت پر چھوڑ دیتے ہیں۔

حضور آپ انصاف کی کرسی پر بیٹھے ہیں۔ انصاف کریں تو سب چیزیں خود بخود ٹھیک ہوجائینگی۔ توہین عدالت کرنے والوں کو چیلنج کرنے کے بجائے سزائیں سنائیں۔

پتہ نہیں کیوں شوکت عزیز صدیقی یاد آرہا ہے۔

جب موصوف کو علم ہوا کہ گستاخ بلاگرز کی پشت پر اسکے اپنے مربی نواز شریف ہیں تو فوراً میڈیا میں فحاشی کے خلاف ایکشن لے ڈالا۔

مزید واہ واہ ہوئی۔ چند دن میں لوگ پچھلا بھی بھول گئے اور موجودہ بھی۔

اللہ اللہ خیر سلا ۔۔۔۔۔۔۔۔۔

آج ایک غریب کانسٹیبل کو اپنی گاڑی سے اڑانے والے ظالم کو چھوڑ دیا گیا۔ دودھ کو چھوڑیں، عدلیہ کو ٹھیک کریں!

تحریر شاہدخان

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here