حکومت کو نہایت چابکدستی سے اسکا جواب دینے کی ضرورت ہے

0
436

اسلام کے آخری قلعے پاکستان میں دراڑیں ڈالنے کے لیے ملک میں برپا فساد کو انتہاء پر لے جانے کی کوشش کی جا رہی ہے ۔۔۔۔۔ !

حکومت کو نہایت چابکدستی سے اسکا جواب دینے کی ضرورت ہے !

فوری طور پر شیعہ اور سنی علماء کی ایک مصالحتی کمیٹی بنائی جائے جو اس بات کی ذمہ داری لے کہ مزید کوئی واقعہ نہیں ہوگا اور حساس علاقے میں جتنی بھی مساجد اور امام بارگاہیں ہیں وہاں فرقہ واریت پر مبنی کوئی بھی تقریر یا بیان نہیں دیا جائیگا۔

حساس علاقوں میں مقامی افراد غیر مقامی افراد پر گہری نظر رکھیں اور کوئی بھی مشکوک شخص نظر آئے تو فوراً اسکی اطلاع قانون فافذ کرنے والے اداروں کو دیں ۔

واقعے میں ملوث جتنے لوگوں کے خلاف شہادتیں دستیاب ہیں انہیں فوری طور پر گرفتار کیا جائے ۔

سوشل میڈیا پر اس معاملے کو بھڑکانے والے پیجز یا لنکس بلاک کر دئیے جائیں ۔

اور آئندہ ایسے واقعات کی روکھ تھام کے لیے ۔۔۔۔۔

اہل تشیع پر ایران کے اثرورسوخ کو استعمال کرتے ہوئے انہیں اس بات پر آمادہ کیا جائے کہ آئندہ ان مخصوص حالات کی وجہ سے اپنی مذہبی رسومات کو مخصوص کی ہوئی جگہوں تک محدود کیا جائے جیسے دنیا کے اکثر ممالک کرتے ہیں ۔

صحابہ(ر) سنی اور شیعہ دونوں کے لیے قابل احترام ہیں اور انکی شان میں گستاخی دونوں کے لیے ناقابل برداشت ۔ صحابہ کی شان میں گستاخی کے خلاف قانون سازی کی جائے اور پھر کوئی بھی یہ عمل کرے تو اسکو سزا دی جائے ۔

اگر حکومت آنکھیں بند کر کے بیٹھی رہی تو اس آگ کی لپیٹ میں وہ خود بھی آجائیگی !!

تحریر شاہدخان

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here