حالات کا اونٹ کس کروٹ پر بیٹھتا ھے ابھی ھمارے گمنام مجاھد اس ساری صورتحال کا نہایت باریک بینی سے مشاہدہ کر رہے ھیں۔

0
711

السلام علیکم میرے عزیز ھم وطنو۔۔۔!

حالات کا اونٹ کس کروٹ پر بیٹھتا ھے ابھی ھمارے گمنام مجاھد اس ساری صورتحال کا نہایت باریک بینی سے مشاہدہ کر رہے ھیں۔۔۔

گذشتہ کچھ ماہ سے پاکستان کے داخلی حالات کو بھی مدنظر رکھیں کہ کیسے کفار اور یہود نے مملکت خداداد پاکستان کے اندر حقوق کے نام پر ایک نہایت خوفناک انتشار کا منصوبہ بنایا ھے جس میں منظور پشتین کو منظر عام پر لا کر اسکی ڈوریاں پیچھے سے براستہ افغانستان یہ کفار خود ہلا رہے ھیں۔ اس بدنام زمانہ وجہ انتشار تنظیم کو گراونڈ سپورٹ جو دے رہے ھیں ان میں اکثریت افغان مہاجرین کی ھے۔ جو نمک حرامی کرنے کے ماسٹر ھیں۔ جس ملک کا کھا رہے ھیں اسی ملک کے خلاف اقدامات اٹھا رہے ھیں۔ اس کے بعد اس ملک کے تمام چھٹے ھوئے ولد الحرام اور اسلام اور پاکستان کے دشمنان ھیں جن میں ملحد، گستاخان اسلام و گستاخان پاکستان، لبرلز،یہود کی پیدا کردہ این جی اوز، علی الاعلان غدار الطاف حیسن اور اس کی پارٹی جس نے کراچی کے جلسے میں ان فتنہ انگیزوں کو مکمل سپورٹ کیا اور افرادی قوت کے ساتھ جلسہ کامیاب کروایا۔۔۔ اس کے علاوہ موجودہ ن لیگی ہجڑا حکومت کی سپورٹ بھی حاصل ھے جس میں نااہل نواز شریف تین بار ملک کا خون چوسنے والی جونک جو اپنی نا اہلی کی وجہ سے اس وقت پاگل کتے کی طرح ادھر ادھر منہ مار رہا ھے۔ اس پاگل کتے کو اتنا بھی شعور نہیں کہ اسکو کفار پاکستان کے خلاف استعمال کر رہے ہیں۔ اس لعنتی کردار نے عدلیہ اور افواج کے خلاف اپنی بکواس جاری رکھی اور جوں ہی منظور پشتین کا فتنہ لانچ ھوا اس نے اس فتنے کی بھرپور حمایت کی جس کی مثال لاہور کے اندر ھونے والا پی ٹی ایم کا جلسہ تھا جس میں نواز شریف اور اسکی بیٹی نے اپنے ن لیگی جیالے بھیج کر لاھور کے اندر پی ٹی ایم کے جلسے کو دوام بخشا۔۔۔

اس دوران منظور گشتین اور اسکے پالتو کتے پاک افواج کے خلاف بدترین نعرے بازی اور کھلم کھلا بغاوت پر اتر آئے۔ لیکن موجودہ ہجڑا نواز شریف کی غلام حکومت نے پاک فوج کے وقار اور ملکی سلامتی کے پیش نظر کوئی بھی ایکشن نہیں لیا اس وجہ سے اس غدار کتے منظور پشتین کے حوصلے بڑھ گئے اور دن بدن اسکی بکواس بھی بڑھتی جا رہی ھے۔ متعدد بار پاک فوج نے مقامی جرگے منعقد کر کے منظور پشتین کو کسی بات چیت کے دائرے میں لا کر معاملات کو حل کرنے کی کوشش کی مگر اس یہودی کتے نے ھمیشہ مذاکرات سے راہ فرار اختیار کیے رکھی۔ اس منظور کے تمام گذشتہ مطالبات پورے کئے جا چکے مگر کسی کوٹھے کی رانڈ کی طرح اس کے خواہشات ناجائز حد تک بڑھتی ہی جا رہی ھیں جو اس کے ناپاک عزائم کی عکاسی کر رہی ھیں کہ یہ بندا کسی بھی حال میں پر امن نہیں رہنے والا ، یہ عوام اور سادہ لوح پختونوں کو پاک فوج کے خلاف استمعال کرنے کی کفار کی پلاننگ ہر عمل پیرا ھے۔

دوسری طرف بھارتی سفیر کی جیو نیوز کراچی سٹوڈیوز کے اندر دو گھنٹے تک دو بھارتی جرنلسٹس کے ساتھ میٹنگ اور سرگرمیاں بھی کافی شک کی نگاہ سے دیکھی جا رہی تھیں کہ ٹھیک دو دن بعد بدبخت نواز شریف نے کفار اور یہودی آقاوں کو خوش کرنے اور اپنی گھٹیا نفرت کا اظہار کرنے کی خاطر اچانک ایک بھارتی جرنلسٹ کو انٹرویو دے مارا جس میں اس نے ممبئی حملوں پر پاکستان کو ذمہ دار قرار دیا۔ (حالانکہ خود بھارتی پولیس چیف نے انکشاف کیا تھا کہ ممبئی حملہ خود بھارت نے کروایا تھا پاکستان پر ملبہ ڈال کر بین الاقوامی طور پر پاکستان کو نقصان پہنچانے کیلیئے عالمی رائے عامہ اپنے حق میں کروانے کی خاطر)

پورا پاکستان اس لعنتی کردار کی بے وقت کی چوول پر حیران و پریشان ھوا کہ اس وقت اچانک ایسے بیان اور انٹرویو کی کیا ضرورت پیش آ گئی تھی۔ تو دوستو یہ بیان بھی اس نواز لعنتی سے پوری پلاننگ کے تحت دلوایا گیا نواز شریف بدلے کی آگ میں جلتا ھوا ہائی جیک ھو گیا اور کفار کا آلہ کار بن کر اپنے ہی ملک کی سلامتی پر نقب لگا بیٹھا۔۔۔

آج اس نواز شریف کے اسی بکواس بیان کی وجہ سے امریکہ نے اسرائیل کو پاکستان کی تنصیبات پر حملہ کرنے کی تجویز/ھمت دی۔ اس وقت حالات اس قدر سنگین صورتحال اختیار کر چکے ھیں کہ اسرائیل پاکستان پر حملے کی تیاری کر رہا تھا کہ پاکستان نے جوابی اقدام کے طور پر اپنی بری فوج اور فضائیہ کو ہائی الرٹ کر دیا ھے۔

آخر حالات سنگینی کی انتہاوں پر پہنچ گئے ھیں تبھی تو ایک ذمہ دار ترین فوجی جنرل نے ایسا بیان جاری کیا۔ چائنہ کی سرکاری ویب سائٹ پر بھی یہ بیان جاری ھوا ھے کہ “ہمیں یقین ھے کہ پاکستان اسرائیل کو 12 منٹ کے اندر تباہ کر سکتا ھے اور اگر ساتھ چائنہ بھی شامل ھو تو یہ کام 2 منٹ میں ھو سکتا ھے۔ کوئی صاحب عقل کوئی صاحب ھوش کوئی صاحب ادراک ھے جو عالمی طاقتوں کے درمیان ایسی بیان بازی کی سنگینی کو سمجھ سکے اور اس بے عقل اور ناسمجھ قوم کو سمجھا سکے کہ صورت حال نہایت نازک ھو چکی ھے۔ جاگ جاو آپس کی لڑائی اور حقوق کے نام پر بک بکواس اور نفرت انگیزیاں چھوڑ دو اور اپنا ملک بچا لو اپنا۔ اس کے لیے آپکو اپنی مسلح افواج کے ساتھ بھرپور تعاون ھمدردی اور کندھے سے کندھا ملا کر کھڑا ھونا پڑے گا۔ اپنی افواج پر بھونکنے والے پاگل کتوں کو سمجھانا ھو گا۔ آپکی افواج ان شاءاللہ عز وجل وطن عزیز کا دفاع ہر صورت کر لیں گی مگر قوم کی بدگمانی اور پاک فوج کے خلاف بد زبانی اس پاک فوج کے حوصلے کہیں پست نہ کر دے۔ اب بھی وقت ھے کہ اپنے مجاھدوں کا ساتھ دیجیئے ہر جگہ میدان جنگ میں بھی اور سوشل میڈیا پر بھی۔ بین الاقوامی پروپیگنڈا چینلز پر بھی اپنے مجاھدوں کو سپورٹ کیجیئے تاکہ وطن عزیز ، دین اسلام اور اپنی قوم کی خاطر لڑنے والے یہ مجاھد کبھی ناکام نہ ھوں۔

آپکی مسلح افواج پوری طرح چوکس اور تیار ھیں دشمن بہت بڑی تعداد میں ھیں جو مشرق و مغرب اور ملک کے اندر سامنے اور چھپ کر وار کرنے کیلیئے تیار بیٹھے ھیں۔ اس نازک وقت میں اپنی صرف آٹھ لاکھ فوج کو آپکی ھمدردی اور دعاوں کی اشد ضرورت ھے۔۔۔

امید کرتا ھوں تمام حالات کو مد نظر رکھ کر آپ کوئی اچھا فیصلہ کریں گے کہ ملک بچانے کیلیئے پاک افواج کا انتخاب کرنا ھے یا پھر حقوق کے میٹھے لولی پاپ کو چوس کر ملک و قوم دونوں کو تباہ کروانا ھے۔۔۔ یہ ذہن میں رکھنا کہ وقت بہت کم ھے فیصلہ جلدی کیجیئے گا۔۔

منقول

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here