بھارت کی کنٹرول لائن پر فائرنگ، جوابی کارروائی میں 9 انڈین فوجی ہلاک، متعدد زخمی

0
113

 بھارت کی کنٹرول لائن پر بلااشتعال فائرنگ کے نتیجے میں‌ ایک پاکستانی فوجی اور 5 شہری شہید ہو گئے، جوابی کارروائی میں 9 بھارتی فوجی ہلاک جبکہ کئی زخمی ہوئے، پاک فوج نے بھارت کے 2 بنکرز بھی تباہ کر دیئے۔ دشمن کو اپنے فوجیوں کی لاشیں اٹھانے میں خوف کا سامنا، سیفد جھنڈا لہرانے لگے۔

لائن آف کنٹرول پر سیزفائر کی خلاف ورزی کرنے پر پاکستان نے ایک بار پھر بھارت کو منہ توڑ جواب دیا، 9 بھارتی فوجی مارے گئے۔

آئی ایس پی آر کے مطابق بھارت نے کنٹرول لائن کے مختلف علاقوں میں سیز فائر کی خلاف ورزی کرتے ہوئے شاہ کوٹ، نوسیری اور جوڑا سیکٹر میں شہری آبادی کو نشانہ بنایا، بھارتی فائرنگ اور گولہ باری کا پاک فوج نے بھرپور جواب دیا۔ ڈی جی آئی ایس پی آر کے مطابق دشمن کے مورچوں کو مؤثرانداز میں نشانہ بنایا گیا جس سے بھارتی فوج کو بھاری جانی نقصان پہنچنے کی اطلاعات ہیں۔ پاک فوج کی کارروائی میں 9 بھارتی فوجی ہلاک اور متعدد زخمی ہوئے جبکہ 2 بھارتی بنکرز بھی تباہ  کر دیئے گئے۔

فائرنگ تبادلے میں ایک پاکستانی فوجی اور 3 شہری بھی شہید ہوئے جبکہ 2 فوجی اور 5 شہری زخمی ہیں جنہیں فوری طور پر ہسپتال منتقل کر دیا گیا، بعدازاں زخمی ہونے والے مزید 2 پاکستانی شہری شہید ہو گئے اس طرح شہید ہونے والے شہریوں کی مجموعی تعداد 5 ہو گئی۔

ڈی جی آئی ایس پی آر کا سوشل میڈیا پیغام میں مزید کہنا تھا کہ بھارت مبینہ کیمپوں کی آڑ میں شہری آبادی کو نشانہ بناتا ہے، دشمن کو سیز فائر خلاف ورزیوں کا منہ توڑ جواب ملتا رہے گا، پاک فوج کنٹرول لائن پر شہریوں کی حفاظت جاری رکھے گی۔ انہوں نے بھارت کو وارننگ دی کہ کنٹرول لائن کی خلاف ورزی پر دشمن کو ناقابل برداشت نقصان پہنچائیں گے۔

وزیراعظم عمران خان نے ایل او سی پر بھارتی فوج کی جانب سے شہری آبادی پر بلا اشتعال فائرنگ کی شدید مذمت کرتے ہوئے شہید ہونے والے شہریوں اور پاک فوج کے جوان کے درجات کی بلندی اور زخمیوں کی صحت یابی کی دعا کی ہے۔ وزیراعظم نے پاک فوج کو بھارتی سیکیورٹی فورسز کو منہ توڑ جواب دینے، جرات اور بہادری پر سلام پیش کیا ہے۔ 

آئی ایس پی آر کا کہنا تھا کہ بھارتی فائرنگ سے 2جوان اور 5 شہری زخمی بھی ہوئے ہیں، بھارت مبینہ دہشت گرد کیمپس کا جواز بنا کر آبادی کو نشانہ بنا رہا ہے، بھارتی فائرنگ سے زخمی شہریوں کو اسپتال منتقل کردیا۔

میجر جنرل آصف غفور نے واضح کیا کہ بھارتی فوج کو ہر سیز فائر خلاف ورزی کا مؤثر جواب دیا جائے گا، پاک فوج ایل اوسی پر شہری آبادی کا تحفظ یقینی بنائے گی۔

ڈی جی آئی ایس پی آر کا مزید کہنا تھا کہ ہراشتعال انگیزی پر بھارتی فوج کو کاری ضرب پہنچاتے رہیں گے، یواین مبصر فوجی گروپ کا کوئی بھی رکن آزاد کشمیر میں کہیں بھی جاسکتا ہے، مقامی وغیرملکی میڈیا بھی آزادکشمیر میں کہیں بھی جاسکتا ہے، جبکہ مقبوضہ کشمیر میں کسی کو جانے کی آزادی نہیں ہے۔

بھارتی فوج نے سفیدجھنڈا لہرا دیا

ڈی جی آئی ایس پی آرمیجر جنرل آصف غفور کا کہنا ہے کہ بھارتی فوج نے سفید جھنڈا لہرانے کے بعد بھارتی فوج لاشیں اور زخمی اٹھانے میں مصروف ہیں، بھارتی فوج کو اشتعال انگیزیوں سے پہلے سوچنا چاہیے تھا۔

ان کا کہنا تھا کہ بھارت کو فوجی آداب کا خیال رکھتے ہوئے آبادی کو نشانہ نہیں بنانا چاہئے تھا، پاک فوج کی جوابی کارروائی سے بھارتی بندوقیں خاموش ہوگئی ہیں، اشتعال انگیزی پر بھارتی فوج کو کاری ضرب پہنچاتے رہیں گے، بھارت کے جھوٹے دعوؤں اور جھوٹے فلیگ آپریشنز کی قلعی ہرسطح پر کھولتے رہیں گے۔

منہ کی کھانے کے بعد بھارتی میڈیا جھوٹے پروپیگنڈے میں مصروف

آئی ایس پی آر کے مطابق پاک فوج کے منہ توڑ جواب کے بعد بھارتی میڈیا جھوٹے پروپیگنڈے میں مصروف ہوگیا، بھارتی میڈیا نے مبینہ کیمپس کو نشانہ بنانے کا جھوٹا دعویٰ کیا ہے، بھارت اخلاقی جرات کا مظاہرہ کرے اور پاک فوج کی جوابی کارروائی کے نقصانات سامنے لائے۔

آصف غفور کا کہنا ہے کہ بھارت مقبوضہ کشمیر میں صورت حال تک رسائی دینے کی بھی جرات کرے، بھارت کے تمام جھوٹے دعوے منطقی انجام تک پہنچ چکے ہیں، بھارت کا یہ جھوٹا دعویٰ بھی اپنے انجام تک پہنچے گا، بھارتی میڈیا پاکستانی میڈیا سے ذمہ دارانہ رپورٹنگ سیکھے۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here