بلوچستان، کے پی کیلئے بھارتی ایم آئی کا ٹیکٹیکل سپورٹ ڈویژن فعال

0
122

بلوچستان، کے پی کیلئے بھارتی ایم آئی کا ٹیکٹیکل سپورٹ ڈویژن فعال

بھارت کی ملٹری انٹیلی جنس میں ٹیکٹیکل سپورٹ ڈویژن (ٹی ایس ڈی) کو دوبارہ فعال کرتے ہوئے پاکستان کے خلاف کارروائیوں کے لئے بلوچستان اور سابق فاٹا سمیت خیبر پختونخوا کیلئے سپیشل سیکشنز بنا دیے گئے

اعلی سیکورٹی ذرائع نے روزنامہ 92 نیوز کو ایک بڑے انکشاف میں بتایا کہ بھارت کے سکیورٹی آپریٹس میں انکے ہیومن انٹیلی جنس نیٹ ورک کے ذریعے پتہ چلا کہ بھارتی نیشنل سیکورٹی ایڈوائزر اجیت ڈوول نے ملٹری انٹیلی جنس میں ٹی ایس ڈی کو دوبارہ فعال کرتے ہوئے اس میں پاکستان کیخلاف کار روائیوں کیلئے بلوچستان، خیبر پختونخوا اور سابق فاٹا کے لئے سپیشل سیکشزبنوا دیے

بھارتی ملٹری انٹیلی جنس میں ٹی ایس ڈی ٹارگٹ ملک میں سبورژن آپریشنز سبورژن آپریشنز کے لئے 2010 میں قائم کیا گیا تھا جسکے پرائمری ٹارگٹ پاکستان مخالف آپریشنز اور مقبوضہ کشمیر میں جدوجہد آزادی کو دبانا تھا، ٹی ایس ڈی کے بارے میں بھارتی انٹیلی جنس آپریٹس انکار کرتا رہا، لیکن اسکی ناکامیوں کے بعد اس بند کرنے کی خبروں کے ساتھ بھارتی ملٹری انٹیلی جنس کا یہ خفیہ ڈویژن منظر عام پر آیا

اجیت ڈوول نے اسے ایک بار پھر سے اس ڈویژن کو فعال کردیا، اسکا اول ہدف بلوچستان،خیبر پختونخوا اور سابق فاٹا میں سبورژن آپریشنز ہیں، ،اعلی سیکورٹی ذرائع کے مطابق رابندر سنگھ اور راہول سنہا کا کور نیم رکھنے والے لیفٹیننٹ کرنل رینک کے بھارتی ملٹری انٹیلی جنس کے افسر نئے ٹی ایس ڈی کے صوبہ بلوچستان،خیبر پختونخوا اور سابق فاٹا سپیشل سیکشنز کے آپریشنز کے انچارج ہیں

ستپال بیدی اور ہنومنت چوہان کے کور نیم رکھنے والے میجر رینک بھارتی ملٹری انٹیلی جنس کے افسر سیکنڈ ان کمانڈ کے طور پر کام کر رہے ہیں،اعلی سیکورٹی ذرائع کے مطابق آپریشنز کابل میں بھارتی سفارتخانے سے چلائے جارہے ہیں ،جبکہ ان کے سب سٹیشنزافغان صوبہ قندھاراورننگرہار ہیں،آپریشن کی ہائی کمانڈ نیو دہلی میں بھارتی ملٹری انٹیلی جنس ڈائریکٹریٹ ہے جو آرمی چیف اور اجیت ڈوول کے ساتھ جڑی ہوئی ہے ،پرانی ٹی ایس ڈی کاکنٹرول سنٹر نیودہلی کینٹ میں اولڈ بوچری میں بنایا گیا تھا ،جبکہ اسکا نیا کنٹرول سنٹربھارتی ملٹری انٹیلی جنس ڈائریکٹریٹ میں بنایا گیا ہے ، پرانی ٹی ایس ڈی میں افسران ،جے سی اوز اور این سی اوز کی تعداد 50 کے قریب تھی ،جبکہ نئی ٹی ایس ڈی میں یہی تعداد 100 سے زائد ہے جس میں ٹارگٹ ملک کے مقامی ایجنٹس کی تعداد شامل نہیں ہے ،نئی ٹی ایس ڈی کے لئے سپیشل سیکریٹ سروس بجٹ رکھا گیا ہے جو بھارتی ملٹری انٹیلی جنس کے فنڈ سے علیحدہ ہے ،ٹاپ سیکورٹی آفیشلز نے اس نمائندے سے رابطے پر کہا ٹی ایس ڈی کی انفارمیشن ملک کے پریمیئر انٹیلی جنس اداروں کی کائونٹر انٹیلی جنس آپریشنز فیلڈ میں ایک بڑی کامیابی ہے ،بھارت کمانڈر کلبھوشن کا استعمال بھی کر چکا ہے جو آج پاکستان میں نیو دہلی کے جرائم کی سزا بھگت رہا ہے ،ایسا لگتا ہے کہ پاکستان کے پاس بھارتی ملٹری انٹیلی جنس ٹی ایس ڈی کے بلوچستان،خیبر پختونخوا اور سابق قبائلی علاقوں کے آپریشنل ہیڈز کی شکل میں نئے کلبھوشن آنے والے ہیں ۔

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here