امریکہ کو صرف آپ کے “پاکستانی” بننے سے مسئلہ ہے۔

0
501

امریکہ پشتونوں کی آواز ۔۔۔ ؟؟

انتہائی دکھ کا معاملہ ہوگا۔ ایک تاریخی المیہ ہوگا اگر پشتون دوبارہ دشمن کے جھانسے میں آگئے اور اس کھیل کو سمجھ نہ سکے۔

پہلے امریکہ نے ان کو انڈیا اور افغانستان کی مدد سے اسلام اور شریعت کے نام پر پاکستان کے خلاف لڑوا کر خود ان کو اور ہزاروں دیگر پاکستانیوں کو مروایا۔

وہاں شکست ہوئی تو اب ۔۔۔۔۔۔

وہی امریکہ ” مشال ” اور ” ڈیوا ” کی مدد سے قوم پرستی کے نام پر پشتونوں کو پاکستان سے لڑوانے کی تیاری کر رہا ہے۔

پہلے اسلام کے نام پر خارجی بنایا اب قوم پرستی کے نام پر الحاد تک لے جارہا ہے۔ جو لوگ اس امریکی دعوت سے متاثر ہیں وہ اسلام اور مسلم قومیت کی بات سن کر ہی بھڑک اٹھتے ہیں۔

وہ ان امریکی چینلز کو اپنی آواز قرار رہے ہیں لیکن یہ نہیں بتاتے کہ آخر امریکہ کو پشتونوں یا بلوچوں سے کونسی ہمدردی ہوگئی ہے؟

یقین مانیں اگر آج پنجابی نعرہ لگا دیں کہ پاکستان کا حصہ رہ کر ہمارا گزارا نہیں تو امریکہ ان کی بھی آواز بن جائیگا۔ کیوں؟؟

کیونکہ امریکہ کو صرف آپ کے “پاکستانی” بننے سے مسئلہ ہے۔

یاد رکھیں ۔۔۔۔۔۔۔

جتنے پشتون کے پی کے میں ہیں اس سے زیادہ سندھ، پنجاب اور بلوچستان میں آباد ہیں۔ اگر پاکستان کی وحدت کو کچھ ہوا تو سب سے زیادہ پشتون خسارے میں رہے گا۔

کیا کے پی کے اور فاٹا ان کروڑوں پشتونوں سنبھال سکتا ہے؟

بلاآخر نتائج کیا ہونگے؟ نہ ختم ہونے والی خونریزی اور خانہ جنگی؟؟

قتل کراچی میں ہوا اور کچھ مخصوص سوشل میڈیا اکاؤنٹس نے پنجاب کو گالیاں دینی شروع کردیں اور باقی بغیر سوچے سمجھے انکی ہاں میں ہاں ملانے لگے۔

ہوش میں آؤ۔ اس کھیل کو سمجھو۔ خود اپنے پاؤں پر کلھاڑی مت مارو۔

ایک جنگ سے سنبھلے نہیں، دوسری کی دعوت قبول کرنی شروع کر دی۔

تحریر شاہدخان

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here