اسلام اور پاکستان کو الگ نہیں کیا جا سکتا اور پاک فوج پاکستان کو اسلامی جمہوریہ بنانے کی کوشش کرتی رہے گی

0
688
“اسلام اور پاکستان کو الگ نہیں کیا جا سکتا اور پاک فوج پاکستان کو اسلامی جمہوریہ بنانے کی کوشش کرتی رہے گی” جنرل کیانی کے یہ الفاظ پاکستان میں موجود لبرل فاسشٹ اور سیکولر لوگوں کے مکروہ چہروں پر تھپڑ کی طرح پڑے ہیں۔۔۔۔۔۔۔۔۔!!
ذرا یروشلم پوسٹ کی یہ خبر پڑھیے۔۔۔۔۔۔!!!!
جہاں یہی بات ایک دوسرے پیرائے میں امریکی کونسلز فار انٹرنیشنل ریلیشنز کے زیر اہتمام چھپنی والی کتاب ” مشرق وسطی سیاست اور عسکری وسعت ” میں کہی گئی ہے
{یروشلم پوسٹ 9 اگست 1967}
پاکستان کی مسلح افواج نظریہ پاکستان ، اس کے اتحاد و سالمیت اور استحکام کی ضامن بنی ہوئی ہیں ۔ جبکہ ملک کی سول ایڈمنسٹریشن بلکل مغرب زدہ ہے اور نظریہ پاکستان پر یقین نہیں رکھتی”۔۔۔۔
مجھے اسرائیل کے پہلے وزیر اعظم ڈیوڈ بن گوریان کا الفاظ یاد آرہے ہیں جنہوں نے پیرس کی ساربون یونیورسٹی میں ممتاز یہودیوں کے ایک اجتماع میں تقریر کرتے ہوئے کہا۔۔۔۔۔۔۔۔

“بین الاقوامی صہیونی تحریک کو کسی طرح بھی پاکستان کے بارے میں غلط فہمی کا شکار نہیں ہونا چاہئیے۔ پاکستان درحقیقت ہمارا اصلی اور حقیقی نظریاتی جواب ہے۔پاکستان کا ذہنی و فکری سرمایہ اور جنگی و عسکری قوت و کیفیت آگے چل کر کسی بھی وقت ہمارے لیے باعث مصیبت بن سکتی ہے ہمیں اچھی طرح سوچ لینا چاہئے ۔بھارت سے دوستی ہمارے لیے نہ صرف ضروری بلکہ مفید بھی ہے ہمیں اس تاریخی عناد سے لازماً فائدہ اٹھانا چاہئیے جو ہندو پاکستان اور اس میں رہنے وا لے مسلمانوں
کے خلاف رکھتا ہے ۔ یہ تاریخی دشمنی ہمارے لیے زبردست سرمایہ ہے۔لیکن ہماری حکمت عملی ایسی ہونی چاہئیے کہ ہم بین الاقوامی دائروں کے ذریعے ہی بھارت کے ساتھ اپنا ربط و ضبط رکھیں”۔۔۔۔۔۔

تحریر شاہد خان

 
 

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here