آپ یہ تو تسلیم کرتے ہیں نا کہ 16 افراد بشمول خواتین دن دیہاڑے قتل ہوئے اور ان کو قتل کرنے والے پولیس والے تھے؟؟

0
624

چلئے حکومت کی مان لیتے ہیں ۔۔۔۔۔۔ !

سانحہ ماڈل ٹاؤن کے حوالے سے ن لیگ کا موقف ہے کہ ۔۔۔۔۔۔

انہیں ڈپٹی کمشنر اور وزیراعلی کے پرنسپل سیکٹری نے بیرئر کے حوالے سے غلط معلومات دیں یا مس گائیڈ کیا۔

شہباز شریف اور راناثناءاللہ نے آپریشن کر حکم نہیں دیا۔

شہباز شریف نے آپریشن روکنے کا حکم دیا تھا۔

پولیس پر پہلے منہاج القرآن سے گولیاں چلائی گئیں جس میں کئی پولیس والے جانبحق ہوئے۔

آپریشن میں کسی لشکر نے حصہ نہیں لیا۔

اور باقر نجفی رپورٹ بےغلط ہے اور اس میں کسی کو ذمہ دار نہیں ٹہرایا گیا۔

چلیں مان لیا ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

آپ یہ تو تسلیم کرتے ہیں نا کہ 16 افراد بشمول خواتین دن دیہاڑے قتل ہوئے اور ان کو قتل کرنے والے پولیس والے تھے؟؟

تب ذمہ داروں کے خلاف آپ نے کیا کاروائی کی؟

جس ڈپٹی کمشنر اور پرنسپل سیکٹری نے آپ کو مس گائیڈ کیا ان میں سے ڈپٹی کمشنر کو بہترین پوسٹنگ اور پرنسپل سیکٹری کو سویٹزرلینڈ مٰں سفیر لگا دیا۔

ڈی آئی جی رانا عبدالجبار کوآپ نے امریکہ بھیج دیا۔

رحیم شیرازی کو لندن بھیج دیا سکالر شپ پر۔

طارق عزیز صاحب لاہور میں ہی ایک بہترین پوزیشن انجوائے کر رہے ہیں۔

چند غریب سپاہیوں کو کچھ عرصہ جیل میں رکھ کر چھوڑ دیا اللہ اللہ خیر سلا۔

جو پولیس والے منہاج القرآن سے ہونے والی فائرنگ سے مبینہ طور پر جانبحق ہوئے ان کے کوائف آپ آج تک پیش نہیں کر سکے کیوں؟

رانا ثناءاللہ کی قیادت میں 16 افراد نے طاہر القادری کو اسلام آباد جانے سے روکنے کے لیے میٹنگ کی۔ میٹنگ سیاسی نوعیت کی تھی تب میں ھائی کورٹ کے حکم سے لگائے گئے بیرئیر ہٹانے کا فیصلہ کیسے ہوا اور پھر اس کے لیے اس قدر خونریز آپریشن ؟؟

اسی میٹنگ میں وہ پولیس والے بھی شریک تھے جنہوں ھائی کورٹ کے حکم کے تحت ان بیریرز کی مارکنگ خود کی تھی اور پولیس آرڈر جاری کیا تھا کہ ادارے کی طرف جانے والے پولیس کی وردیوں میں ملبوس لوگوں کی بھی چیکنگ ہوگی پھر بھی لاعلم؟

حضور مان لیتے ہیں کہ باقی نجفی رپورٹ نے کسی کو ذمہ دار نہیں ٹہرایا۔

پاکستان میں ایک آئین نامی کتاب بھی ہے جس کا آپ دن رات راگ الاپتے ہیں۔ اس آئین نے آپ کو لوگوں کی جان و مال کی حفاظت کا ذمہ دار ٹہرایا ہے کہ نہیں؟ اس ذمہ داری کا آپ نے کیا کیا ؟؟

تحریر شاہدخان

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here