آرمی چیف کو ملکی تاریخ میں پہلی بار سینیٹ بلایا گیا۔ سینٹ کو کئی معاملات پر تشویش تھی جنکا تسلی بخش جواب دیا گیا۔ چند ایک پیش خدمت ہیں۔

0
401

آرمی چیف کو ملکی تاریخ میں پہلی بار سینیٹ بلایا گیا۔ سینٹ کو کئی معاملات پر تشویش تھی جنکا تسلی بخش جواب دیا گیا۔ چند ایک پیش خدمت ہیں۔

اندرونی سیکیورٹی کے لیے کیا گیا اب تک ؟

” آپریشن ضرب عضب، آپریشن ردالفساد اور نیشنل ایکشن پلان پر پاک فوج اپنے حصے کام کام بخوبی نمٹایا۔ صرف آپریشن ردالفساد کے تحت اب تک پنجاب میں 13011 اور خیبرپختونخوا اور فاٹا میں 1249 کومبنگ اورانٹیلی جنس آپریشن کیے گئے۔ ان آپریشنز میں ہزاروں ٹن باردو، 19000 ہتھیار اور سینکڑوں دہشت گرد مارے اور پکڑے گئے۔ نتیجے میں ملک میں امن و امان کی صورتحال میں بہتری آئی”

آرمی عدالتوں نے اب تک کیا کیا؟

“فوجی عدالتوں نے اب تک 274 مقدمات کا فیصلہ کیا۔ 161 مجرموں کو سزائے موت سنائی گئی جن میں سے 56 مجرموں کو پھانسی دی گئی۔ جنرل قمر جاوید باجوہ کے آرمی چیف بننے کے بعد فوجی عدالتوں کو 160 مقدمات بھیجوائے گئے، جن میں سے 33 پر فیصلہ سنایا گیا، 8 کو سزائے موت اور 25 کو قید کی سزائی دی گئی “

باہر کے دورے کیوں کیے؟

“اہم ممالک کے دورے فوجی سفارتکاری کاحصہ ہیں، علاقائی ممالک سے تعلقات میں بہتری کیلئے دورے معاون ثابت ہوئے. افغانستان میں ہونے والی تبدیلیوں کو کسی صورت نظر انداز نہیں کر سکتے، بارڈرمینجمنٹ پاک افغان سرحدکومحفوظ بنانے کے لئے نا گزیر ہے”

اسلامی اتحاد کیوں بنایا گیا ہے؟

“41 اسلامی ممالک کا اتحاد کسی کے خلاف نہیں ، ابھی اس کے ٹی او آرز طے ہونا باقی ہیں۔ ایران اور سعودی عرب کی لڑائی نہیں ہوگی اور نہ ہی ہم ایسا ہونے دیں گے ان شاءاللہ “

دھرنے میں کیوں دخل اندازی کی کیا دھرنے کے پیچھے آپ تھے؟

” دھرنے میں وزیراعظم کے حکم پر مداخلت کی اور وہ تمام اقدامات سے باخبر رہے۔ دھرنے کے پیچھے پاک فوج ثابت ہوئی تو میں استعفی دے دونگا”

آپ بجٹ کا بڑا حصہ لے جاتے ہیں؟

” پاک فوج کو کل بجٹ کا صرف 18 فیصد ملتا ہے جس میں سے آٹھ آعشاریہ تین فیصد بری فوج کو جاتا ہے۔ فوج کے تحت چلنے والے ادارے 177 ارب روپے ٹیکس ادا کرتے ہیں جو سب سے زیادہ ہے”

۔۔۔۔۔۔۔۔ لوجی ۔۔۔۔۔ ہوگئی تسلی ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ ؟؟؟؟؟؟؟؟

اب جناب چیرمین سینٹ صاحب پاکستان میں کچھ اور معاملات بھی ایسے ہیں جن پر آپ کو نہ صرف تشویش ہونی چاہئے بلکہ ذمہ داروں کو بھی طلب کرنا چاہئے ۔۔۔۔۔ مثلاً ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

نیشنل ایکشن پلان میں سول حکومت کے ذمے 17 نقاط میں سے کسی ایک پر بھی عمل درآمد نہیں کیا گیا،

عدالتوں میں 11000 سے زائد دہشت گردوں کے مقدمات زیر التوا ہیں اور تقریباً تمام پکڑے جانےوالے سہولت کار ضمانتیں پا کر رہا ہوچکے ہیں،

چار سال تک پاکستان کا وزیرخارجہ ہی مقرر نہیں کیا گیا، جسکا ناقابل تلافی نقصان ہوا، کل بھوشن اور کشمیر پر مسلسل خاموشی اختیار کیے رکھی،

35 ارب ڈالر قرضہ، موٹر ویز اور اہم قومی عمارات گروی رکھی گئیں، بجٹ کا خسارہ 32 ارب ڈالر ہوچکا ہے اور ریاست دیوالیہ ہونے کے قریب ہے،

کسی ایک ڈیم پر کام نہیں ہوا، بجلی کے تمام بڑے منصوبے ناکام بنا دئیے گئے،

2 کروڑ سے زائد پاکستانیوں کو ھیپائٹس سی اور صرف سندھ میں ایک لاکھ سے زائد لوگوں کو ایڈز ہے،

60 فیصد پاکستانی آرسینک ملا پانی اور 95 فیصد پاکستانی فارمیلین ملا دودھ پی رہے ہیں،

قبول اسلام پر پابندی لگائی گئی، ختم نبوت کے خلاف سازش کی گئی،

کیا ان کے ذمہ داروں کو طلب کرنے کی زحمت کرینگے؟؟؟؟؟/

جناب عالی ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔

سپاہ سالار نے یہ کہہ کر آپ سمیت تمام جمہوریوں کے منہ پہ زوردار تھپڑ مارا ہے کہ ۔۔۔۔ ” پالیسی آپ بنائیں عمل ہم کرینگے ” ۔۔۔

کیا آپ بتانا پسند کرینگے کہ امریکہ، افغانستان، ایران اور انڈیا کے حوالے سے درحقیقت آپ نے کیا پالیسی بنائی ہے۔۔۔۔۔۔۔؟؟؟

تحریر شاہدخان

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here